عالمی امن کیلئے مسئلہ کشمیرفوری طور پرحل کرایا جائے،مقررین

عالمی امن کیلئے مسئلہ کشمیرفوری طور پرحل کرایا جائے،مقررین

  

لاہور(پ ر)دُنیا کے اَمن کو لاحق خطرے سے بچانے کے لیے عالمی برداری بھارت پر دَباؤ ڈال کر کشمیرکا مسئلہ کشمیری عوام کی اُمنگوں کے عین مطابق حل کرنے پر مجبور کرے ،بھارت کے مقبوضہ کشمیر میں المناک مظالم جو امنِ عالم کے حوالے سے عالمی برادری کے سامنے ایک سوالیہ نشان بنے ہوئے ہیں ،مقبوضہ کشمیر کے مظلوم عوام کے حقِ خود اِرادیت کے حوالے سے اقوامِ متحدہ کی منظور کردہ قرار داد مسلسل عدم توجہی کا شکار ہے ،پاکستانی حکمرانوں کو چاہیے بھارت ،اقوام متحدہ اور عالمی برادری کو اس حقیقت سے آگاہ کروائے کہ مسئلہ کشمیر میں اقوام متحدہ کا کردار ثالث کا نہیں بلکہ عمل درآمد کرانے والے فریق کا ہے ثالثی تو اُس وقت کرائی جاتی ہے جب فیصلہ کرانا ہو فیصلہ تو ہو چکا کہ مسئلہ کشمیر کا حل رائے شماری ہے ۔ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز ’’مقبوضہ کشمیر ۔المناک مظالم ،عالمی برادری کی ذمہ داریاں‘‘ کے موضوع پر شوریٰ ہمدرد کے اجلاس سے مقررین نے کیا ۔اجلاس میں سابق سیکرٹری خارجہ شمشاد احمد خان ،چیئرمین کشمیرایکشن کمیٹی جسٹس(ر)شریف حسین بخاری، مقبوضہ کشمیر سے آئے ہوئے نوجوان راہنما بابر قادری ،ڈاکٹر رفیق احمد، بشریٰ رحمن ،ابصار عبدالعلی،قیوم نظامی،سمیحہ راحیل قاضی ،میجر (ر)صدیق ریحان، جنرل(ر)راحت لطیف، برگیڈیئر (ر)اشفاق احمد،پروفیسر خالد محمود عطاء، پروفیسر نصیر اے چوہدری،سرفراز شاہ،ثمر جمیل خان ،عمر ظہیر میر،یامین صدیقی ،اقبال قریشی ،خالدہ جمیل چوہدری ،رانا امیر احمد خان ،سلیم اختر، افتخار مجاز، سید احمد حسن اور دیگر شامل تھے۔مقررین نے مزید کہا کہ کشمیر کا مقدمہ انتہائی مضبوط ہے مگر لیڈر شپ کی وجہ سے ہماری وکالت کمزور ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -