کشیدگی میں کمی کی پیشکش

کشیدگی میں کمی کی پیشکش

مکرمی! گزشتہ کئی ہفتوں سے لائن آف کنٹرول پر جاری کشیدگی سے علاقے کا امن خطرے میں پڑ گیا۔ بھارت اور پاکستان کی جانب سے فائرنگ اور مخالفانہ بیانات کا سلسلہ چل نکلا تھا۔ بھارتی حکومت ہیجانی کیفیت میں مبتلا کبھی ایک پہلو پر جارحیت کرتی نظر آئی تو کبھی دوسرے پر۔ بھارتی جارحیت کا جواب پاکستانی قوم نے احسن انداز میں دیا۔ گزشتہ روز پارلیمانی رہنماؤں کے مشترکہ اعلامیے کی اشاعت کے بعد قومی یکجہتی اور اتحاد کا مخالفانہ پیغام بھارت اور دنیا کو ملاجس سے بھارت کے لہجے میں نرمی آئی۔ اسلام آباد میں ہونے والے مشترکہ اجلاس کے اگلے روز ہی بھارت کے قومی سلامتی کے مشیر اجیت دوول نے اپنے پاکستانی ہم منصب سے فون پر رابطہ کیا جس میں اس امر پر زور دیا گیا کہ باہمی اختلافات کو مذاکرات کے ذریعے حل ہونا چاہیے۔ یہی نہج نہ صرف دونوں ممالک کی ترقی کے لئے اشد ضروری ہے، بلکہ پورے خطے کے امن اور ترقی کے لئے لازمی ہے۔ اسے قائم رہنا چاہیے۔(مسز جمیل،لاہور)

مزید : اداریہ