فرنیچر سازی کی صنعت میں پاکستان سے تعاون میں اضافے کا خواہاں ہیں :چینی وفد

فرنیچر سازی کی صنعت میں پاکستان سے تعاون میں اضافے کا خواہاں ہیں :چینی وفد

  

اسلام آباد(اے پی پی) پاکستان کے دورے پر آئے چینی وفد کے سربراہ زوبویانگ نے نے کہاہے کہ ان کا ملک فرنیچر سازی کی صنعت میں پاکستان کے ساتھ تعاون میں مزید اضافے کاخواہاں ہیں۔ انہوں نے یہ بات پاکستان فر نیچر کونسل کے ہیڈ آفس کے دورے کے موقع پر گفتگو میں کہی۔ کونسل کے ڈپٹی جنرل منیجر فیصل محسن نے چینی وفد کے ارکان کو پاکستان میں فرنیچر سازی کی صنعت کی ترقی کے امکانات پر بریفنگ دی۔ انہوں نے بتایا کہ یہ صنعت پاکستان فرنیچر کونسل کے چیف ایگزیکٹو میاں کاشف اشفاق کی ہمہ جہت قیادت میں ترقی کر رہی ہے اور پاکستانی فرنیچر کو چین میں متعارف کرانے کے زبردست مواقع موجود ہیں۔ چینی وفد کے سربراہ زوبویانگ نے پاکستانی فرنیچر میں زبردست دلچسپی کا اظہار کیا اور دونوں ہمسایہ اور دوست ممالک کے درمیان فرنیچر کی تجارت میں اضافے پر تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے فرنیچر سازی کی صنعت سے متعلقہ کارپوریٹ سیکٹر کو سائنسی بنیادوں پر ترقی دینے کے طریقوں پر بھی گفتگو کی۔ چینی وفد کی رکن ریٹاچو نے اس موقع پر کہا کہ چین اور پاکستان کی نہ صرف سرحدیں ملتی ہیں بلکہ اقتصادی و سیاسی امور پر دونوں کے نظریات بھی مشترک ہیں۔ دونوں ممالک میں ڈیڑھ ارب افراد پر مشتمل زبردست مارکیٹ موجود ہے لیکن دونوں کے درمیان تجارتی حجم اس مارکیٹ کے تناسب سے کم ہے۔ چینی ادارے پاکستانی فرنیچر میں زبردست دلچسپی رکھتے ہیں۔ پاکستان میں متعدد شعبوں میں چینی سرمایہ جاری باہمی دوستانہ تعلقات کی عکاس ہے جن کی بنیاد باہمی اعتماد اور احترام پر ہے۔ چین کی فرنیچر سازی کی صنعت سے وابستہ افراد اور ادارے پاکستان کے ساتھ تجارتی تعلقات میں اضافے کے خواہاں ہیں۔ خاص طور سے وہ پاکستانی فرنیچر جس پر ماہرین ہاتھ سے کشیدہ کاری کرتے ہیں چینیوں کیلئے زیادہ دلچسپی کا باعث ہے۔ فیصل محسن نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان تعاون خاص طور سے چین کی طرف سے آلات اور سرمایہ کاری کی فراہمی فرنیچر کے معیار کو بہتر بنا سکتی ہے۔ اس کیلئے ضروری ہے کہ پاکستانی صنعت خود کو گھریلو سطح سے نکال کر تربیت اور جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے ایک تخلیقی صنعت میں تبدیل کرے۔

انہوں نے کہا کہ چین فرنیچر کی درآمد کے باوجود پاکستان میں مقامی فرنیچر کی مانگ میں کمی نہیں آئی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان سے فرنیچر کی برآمدات کا حجم 80 لاکھ ڈالر سے ایک کروڑ 20 لاکھ ڈالر کے قریب ہے جو صنعت کی حقیقی صلاحیت سے کہیں کم ہے۔

مزید :

کامرس -