ہنگری میں مہاجرین ممنوع قرار، بل پرلیمنٹ میں پیش

ہنگری میں مہاجرین ممنوع قرار، بل پرلیمنٹ میں پیش

بڈاپسٹ(این این آئی)ہنگری نے کہا ہے کہ ایک ایسا قانون تجویز کیا جائے گا، جس سے ملک میں مہاجرین کی بڑے پیمانے پر آباد کاری پر پابندی لگائی جا سکے گی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک بیان میں ہنگری کے وزیر اعظم وکٹور اوربان نے اعلان کیا کہ دس اکتوبرکوپارلیمان میں ایک ایسا قانون بحث کے لیے پیش کیا جائے گا، جس کے تحت ہنگری میں مہاجرین کی آباد کاری ممنوع قرار دے دی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ اٹھانوے فیصد ووٹرز نے مہاجرین سے متعلق یورپی یونین کے کوٹہ سسٹم کو مسترد کر دیا ہے۔ اس ریفرنڈم کے نتائج کو قانون کی شکل دی جانا چاہیے۔اس قانون کو حتمی شکل دینے کے لیے اس پر صدر کے دستخط ہونا ضروری ہیں، جس کے بعد نومبر کے آغاز میں اس پر عملدرآمد شروع ہو سکے گا۔ اتوار کے دن ہنگری میں کرائے گئے ریفرنڈم کے نتائج کے مطابق تین اعشاریہ تین ملین ووٹرز نے یورپی یونین کے اس منصوبے کو مسترد کر دیا تھا، جس کے تحت اٹھائیس رکنی یورپی یونین کے تمام ممالک میں ایک کوٹے کے تحت مہاجرین کو منصفانہ طور پر تقسیم کرنے کی بات کی گئی ہے۔

مزید : عالمی منظر