تعلیم ترقی کی کنجی ہے قومیں تعلیم سے بنتی ہیں میٹروبسوں سے نہیں :عمران خان

تعلیم ترقی کی کنجی ہے قومیں تعلیم سے بنتی ہیں میٹروبسوں سے نہیں :عمران خان

 پشاور( پاکستان نیوز)پاکستان تحریکِ انصاف کے چیئر مین عمران خان نے کہا ہے کہ نیا پاکستان میں سب سے زیادہ اہمیت اساتذہ کو دی جائے گی کیونکہ ہم اس بات پر یقین کر تے ہیں کہ قومیں ہمیشہ تعلیم سے بنتی ہیں میٹرو سے نہیں ۔ اساتذہ کو تلقین کر تاہوں کہ وہ ہمیشہ زندگی میں سچ بولاکریں کیونکہ ان کی ذمہ داری بچوں کی تربیت ہے اگر وہ سچ نہیں بولیں گے تو اس ملک کو ایک بہترین مستقبل نہیں مل سکے گا۔ میر ی خواہش ہے کہ اساتذہ کی تنخواہیں اتنی بڑھا دیں کہ ہر کوئی معلم کے شعبے کو اولین ترجیح دے ۔ ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے عالمی یومِ اساتذہ کے دن کی منا سبت سے محکمہ ابتدائی و ثانوی تعلیم کی جانب سے وزیرِ اعلی ہاؤ س پشاور منعقدہ ایک پرُ وقار تقریب سے بحثیتِ مہمانِ خصوصی کر تے ہوئے کیا۔ عمران خان کا کہناتھا کہ ماضی میں ٹیلنٹ سرکاری سکولوں سے نکلتا تھا لیکن آج اس ملک میں سرکاری سکولوں کا معیارِ تعلیم گرادیاگیا ہے کیونکہ سرکاری سکولوں میں کسی امیر کا بچہ نہیں پڑھتا صرف پیسے والے ہی آج بہتر ین تعلیم حاصل کر رہے ہیں لیکن خیبر پختونخوا میں بر سرِاقتدار آتے ہی تحریکِ انصاف نے شعبہ تعلیم پر ایمر جنسی لگائی اور صوبہ کی تاریخ میں پہلی بار شعبہ تعلیم میں سزا و جزا کا عمل شروع کرنے پر خیبر پختونخوا حکومت باالخصوص محکمہ ابتدائی و ثانوی تعلیم کو خراجِ تحسین پیش کر تا ہوں اور اچھی کا رکردگی پر اساتذہ کو کیش ایوارڈ سے نوازنے پر دلی خوشی ہوتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بد قسمتی سے گذشتہ ساٹھ سالوں میں شعبہ تعلیم پر کوئی خاص توجہ نہیں دی گئی جن لوگوں کو ہم کافر کہتے ہیں ان کے ملک میں سب سے بہتر تعلیم کا نظام ہے اور وہاں تمام قابل لوگ سرکاری سکولوں سے نکلتے ہیں اور جو بچہ سرکاری سکول میں فیل ہو جائے تو پھر وہ پرائیویٹ سکول میں جاتا ہے لیکن جس ملک میں میاں نواز شریف حکمران ہو تو وہاں سرکاری سکولوں اور شعبہ تعلیم کے نام پر عوام کے ساتھ گھناؤنا مذاق کیا جاتا ہے لیکن خیبر پختونخوا حکومت کو مبارکباد پیش کر تا ہوں کہ انہوں نے شعبہ تعلیم کی بہتری کیلئے سنجیدہ اقدامات اُٹھائے اور میرے لئے یہ بات باعثِ فخر ہے کہ تحریکِ انصاف کی صوبائی حکومت کے دور میں 35000 بچے پرائیویٹ سکولوں کو چھوڑ کر سرکاری سکولوں میں آگئے ہیں ۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ جس نظام میں میرٹ اور احتساب نام کی کوئی چیز نہ ہو تو میں اس کرپٹ نطام کے خلاف کھڑا ہوں اور تحریکِ انصاف کرپشن کے خلاف جنگ کر رہی ہے اور ہم عنقریب یہ جنگ جیتنے والے ہیں۔ وہ ممالک کبھی تر قی کی منازل طے نہیں کر سکتے جودو بنیادی باتوں یعنی انسانی وسائل پر خرچ اور اداروں کو مضبوط کرنے پر عمل نہیں کر تے ۔ تحریکِ انصاف خیبر پختونخوا میں انسانوں پر وسائل خرچ کر رہی ہے اور اداروں کو اصلاحاتی عمل کے ذریعے مضبوط کیا ہے۔ چیئر مین تحریکِ انصاف نے اس موقع پر محکمہ ابتدائی و ثانوی تعلیم کی جانب سے صوبہ بھر میں بہترین نتائج دینے والے سرکاری سکولوں کے اساتذہ و پرنسپلز کو نقد انعامات دیئے ۔ تقریب میں صوبائی وزراء ، اراکینِ اسمبلی سمیت اساتذہ اور والدین کی بھاری تعداد مو جو دتھی۔

پشاور( پاکستان نیوز)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے صوبے کے نوجوانوں کو صحت مندانہ تفریحی مواقعوں کی فراہمی کیلئے حیات آباد سپورٹس کمپلیکس کا بدھ کے روز افتتاح کر دیا۔150کنال اراضی پر محیط یہ سپورٹس کمپلیکس 21کروڑ روپے کی لاگت سے تین برسوں میں مکمل کیا گیا ہے۔اس سپورٹس کمپلیکس میں ہاکی،فٹ بال اور کرکٹ گراؤنڈز کے ساتھ ساتھ ایک کثیر المقاصد ہال اور ٹینس اور سکواش کے کورٹس اور بورڈ گیم کیلئے علیحدہ شعبے کے قیام کے ہمراہ مردو خواتین کیلئے ا لگ الگ جمنازیم بھی تعمیر کئے گئے ہیں۔یہ سپورٹس کمپلیکس چارسدہ میں باچا خان سپورٹس کمپلیکس کی تکمیل کے بعد موجودہ حکومت کی جانب سے مکمل کردہ ا س نوعیت کا دوسرا سپورٹس کمپلیکس ہے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی زیر قیادت مخلوط حکومت نے صوبے میں کھیلوں کے فروغ کو اپنی اولین ترجیحات میں شامل کر رکھا ہے ۔انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا کے نوجوانوں میں بے مثال ٹیلنٹ موجود ہے لیکن کھیلوں کی سہولیات کی کمی کی وجہ سے ماضی میں ان صلاحیتوں کو فروغ نہیں دیا جا سکا ۔ صوبے میں کھیلوں کی سرگرمیوں کے فروغ کے لئے موجودہ حکومت نے 67.69ملین روپے کی لاگت سے مردان سپورٹس کمپلیکس میں ایک عالمی معیار کے ہاکی ٹرف کی تعمیر مکمل کی ہے ۔صوبائی حکومت کی جانب سے فاسٹ ٹریک بنیادوں پر مکمل کیا گیا یہ ہاکی ٹرف صوبے میں دستیاب عالمی معیار کا واحدمعیاری ہاکی ٹرف ہے اس کے علاوہ صوبے میں صحت مندانہ تفریحی سرگرمیوں کے فروغ کیلئے مختلف کھیلوں کے کھلاڑیوں کے مابین 10۔ملین روپے لاگت کی سپورٹس کٹس بھی تقسیم کی گئی ہیں۔یہ کٹس تین ماہ کے ریکارڈ ٹائم میں خریدی اور تقسیم کی گئیں۔اس موقع پر چئیرمین عمران خان نے نوجوانوں پر زور دیاکہ وہ کھیلوں کی سرگرمیوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں جبکہ صوبائی حکومت بھی صوبے میں کھیلوں کی سرگرمیوں کے فروغ کیلئے ٹھوس اقدامات کر رہی ہے۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ خیبر پختونخوا کے محکمہ کھیل و ثقافت نے صوبے میں انڈر23گیمز کے انعقاد کیلئے تیاریاں مکمل کر لی ہیں۔تقریباً پانچ ہزار مرد و خواتین کھلاڑیوں کو ان کے متعلقہ ڈویژنل ہیڈکوارٹرز میں 15مختلف کھیلوں کیلئے منتخب کیا گیا ہے جس کے بعد بین الڈویژن گیمز صوبائی دارالحکومت پشاور میں منعقد کئے جائیں گے۔ اس سلسلے میں 74ملین روپے کا بجٹ مختص کیا گیا ہے۔ موجودہ صوبائی حکومت نے پورے خیبر پختونخوا میں 25سپورٹس گراؤنڈز کی تعمیر مکمل کر لی ہے جبکہ تحصیل کی سطح پر مزید 33سپورٹس گراؤنڈز پر کام تیزی سے جاری ہے۔اس ضمن میں کل75نئے سپورٹس گراؤنڈز تعمیر کئے جائیں گے جن سے صوبہ بھر میں صحت مندانہ اور تفریحی سرگرمیوں کو فروغ دینے میں بے حد معاونت ملے گی جبکہ مکمل کردہ گراؤنڈز کی دیکھ بھال اور تحفظ کیلئے منیجمنٹ کمیٹیاں بھی تشکیل دے دی گئی ہیں۔

مزید : صفحہ اول