مرکزی حکومت مسلسل صوبائی حقوق پر ڈاکہ ڈال رہی ہے،ڈاکٹر امجد علی

مرکزی حکومت مسلسل صوبائی حقوق پر ڈاکہ ڈال رہی ہے،ڈاکٹر امجد علی

  

پشاور( پاکستان نیوز)وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے ہاؤسنگ ڈاکٹر امجد علی نے کہاہے کہ مرکز بجلی میں بھی صوبہ کو اپنا حق اور حصہ نہیں دے رہا ۔ گیس رائلٹی میں بھی صوبہ کو حق نہیں مل رہا ہے۔ صوبہ میں این ایچ اے کے روڈ کھنڈرات بنے ہوئے ہیں اور پھر ملاکنڈ کے عوام پر کسٹم ایکٹ کو لاگو کرانا اور ایک بندے کیلئے سیاسی پوائنٹ سکورنگ کا موقع دینا اور اب مرکزی حکومت کا صوبہ کے ساتھ ایک اور دھوکہ کہ سی پیک منصوبہ سے مغربی روٹ کے نکالنے کے اقدامات مسلم لیگ کی حکومت کے پختون قوم اور صوبہ کے ساتھ سراسر ظلم اور نا انصافی پر مبنی ہیں اور پھرامیر مقام کے بیانات اور پنجاب کے لئے وکالت کرنا یہ سب صوبے کی ترقی کے خلاف سازش ہے اورپختون قوم کے ساتھ دشمنی ہے لیکن صوبائی حکومت اس سازش کو ناکام بنائے گی۔ جس طرح کسٹم ایکٹ کی سازش ناکام بنائی ہے۔انہوں نے کہا کہ سی پیک منصوبہ میں مغربی روٹ کا شامل نہ ہونا پختونوں اور پورے صوبے کے خلاف سازش ہے ۔ شاہ سے زیادہ شاہ کے وفادار بننے کے کوشش میں امیر مقام بھول گئے ہیں کہ وہ اس صوبہ کے باشندہ ہے اور اُن کو اس صوبہ کے حقوق اور ترقی کا سوچنا چاہیے لیکن حسبِ عادت وہ دوسروں کے بول بولنے لگے ہیں جبکہ ووٹ حاصل کرنے کے لئے اپنی سیاست خیبر پختونخوا میں کر رہے ہیں ۔ ان کو یہ دوغلی پالیسی تر ک کرنا ہوگی۔ اگر موصوف کو سیاست یہاں کرنی ہے اور ووٹ یہاں کے لوگوں سے لینے ہیں تو پھر پنجاب کا نمائندہ بننے کی کوشش نہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ مغربی روٹ اگر سی پیک منصوبے میں شامل نہ ہوا تو آخری حد تک احتجاج کرینگے چاہیے ہمیں حکومت چھوڑنا کیوں نہ پڑے او ر امیر مقام پہلے سوات کی ترقی کے دشمن بنے ہوئے تھے اور اب پورے صوبہ خیبر پختونخوا کے ترقی کے دشمن بنے ہوئے ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -