سیاسی پارٹیاں اپنے فیصلے قبائل پر مسلط نہ کرے ،قبائلی ملکان

سیاسی پارٹیاں اپنے فیصلے قبائل پر مسلط نہ کرے ،قبائلی ملکان

خیبر ایجنسی (بیورورپورٹ)قبائلی علاقوں میں مر دم شماری کرکے ریفر نڈم کر ایا جائے ،جو بھی فیصلہ آئے گا سب کو منظور ہو گا ،سیا سی پارٹیاں اپنے فیصلے قبائلی عوام پر مسلط نہ کر یں ،قبائلی علاقوں کو صوبے ضم کرنے کی آفتاب شیرپاو سمیت دوسرے سیاسی پارٹیوں کی بیانات کی شدید الفاظ میں مذمت کر تے ہیں ،قبائلی ملکان قبائلی ملکان ملک صلاح الدین ، ملک اسرار ،ملک خالد خان آفریدی،ملک عبدالرزاق اور ملک زینت آفریدی نے میڈیا کو بتایا کہ قبائلی عوام شدیددو چار ہیں تمام افراسٹرکچر تبا ہ ہو گیا ہے اور لاکھوں قبائل بے گھر ہو گئے ہیں جب تک آئی ڈی پیز تمام اپنے گھروں میں دوبارہ آباد نہیں ہو تے اسوقت تک کوئی فیصلہ قبول نہیں کر ئنگے انہوں نے کہاکہ سیاسی پارٹیوں کے قائدین اسلام آباد کنوشن سنٹر میں انکے ساتھ وعدہ کیا تھا کہ جب تک قبائلی آئی ڈی پیز دوبارہ اپنے گھر وں میں آباد نہیں ہو تے اس وقت تک قبائلی علاقوں میں نئے تجر بات نہ کئے جائے انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان اور محمود اچکزئی نے لاکھوں بلکہ کروڑوں قبائیلوں کی تر جمانی کی ہے اور جو لوگ قبائلی علاقوں میں تبدیلی کی بات کر رہے ہیں وہ قبائلی عوام کی مشکلات سے بے خبر ہیں پہلے صحیح طریقے سے مر دم شماری کر کے پھر ریفرندم کیا جائے جو بھی فیصلہ آئے گا وہ سب کو منظور ہو گا انہوں کہا کہ جس طرح قبائلی علاقوں میں ووٹ کے زریعے ممبر قومی اسمبلی منتخب ہو تا ہے اسی طرح اس اہم مسئلے کیلئے بھی قبائلی عوام سے پو چھا جائے اور اس کا بہترین حل ریفرنڈم ہیں انہوں نے کہاوہ صوبے میں ضم ہو نے کے بجائے آذاد کونسل ،علیحدہ صوبہ یا اصلاحات کے حامی ہیں بلکہ صوبے میں ضم ہو نے کیلئے کسی صورت تیار نہیں ہیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر