پاکستان نے روس کو کاسا 1000 منصوبے میں شمولیت کی دعوت دے دی

پاکستان نے روس کو کاسا 1000 منصوبے میں شمولیت کی دعوت دے دی
پاکستان نے روس کو کاسا 1000 منصوبے میں شمولیت کی دعوت دے دی

  

اسلام آباد(صباح نیوز)پاکستان نے روس کو کاسا 1000منصوبے میں شمولیت کی دعوت دے دی ہے اس منصوبے میں شامل ہونے کے بعد روس اکتوبر سے اپریل تک بجلی فراہم کرسکے گا پاکستان اور روس نے جامشورو میں روسی فنڈنگ کے ساتھ 600میگاواٹ کے گیس پاور منصوبے کی اپ گریڈیشن پر بھی بات چیت شروع کرنے پر اتفاق کیا ہے اس منصوبے کی تجویز روس کے نائب وزیر توانائی یوری سینٹیورین اور سیکریٹری پانی و بجلی محمد یونس ڈھاگا کے درمیان اسلام آباد میں ہونے والی ملاقات میں زیر غور آئی۔

سیکرٹری پانی و بجلی نے کہا کہ کاسا منصوبے پر کام کا آغاز ہو چکا ہے کرغزستان تاجکستان اس منصوبے کے ذریعے گرمیوں میں مئی سے اکتوبر تک پاکستان کو پن بجلی مہیا کریں گے تاہم اکتوبر سے اپریل تک یہ ٹرانسمیشن لائن روس تھرمل بجلی کی فراہمی کے لیے استعمال کر سکتا ہے۔ روس کے اس منصوبے میں شامل ہونے سے علاقائی روابط بڑھیں گے، خطے کے درمیان تعاون کو فروغ ملے گا۔ پاکستان میں توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کے بہترین مواقع موجود ہیں۔ پاکستان روس کے ساتھ تعاون کو نئی بلندیوں تک لے جانا چاہتا ہے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

روسی نائب وزیر کا کہنا تھا کہ روسی کمپنیوں کو توانائی کے شعبے میں وسیع تجربہ حاصل ہے، وہ پاکستان میں توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کرنا چاہتی ہیں انہوں نے کاسا 1000میں روس کی شمولیت کے حوالے سے پاکستان کی پیشکش کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ پاکستان اور روس اس مقصد کے لیے مزید مشترکہ منصوبے شروع کرسکتے ہیں۔ روس جامشورو پاور پلانٹ کی اپ گریڈیشن کے منصوبے پر جلد کام کرنا چاہتا ہے دونوں ملکوں کے درمیان تعاون کے فروغ سے دو طرفہ تعلقات گہرے ہوں گے۔

مزید :

اسلام آباد -