پی آئی اے شدید مالی بحران کا شکار،11ہزار ملازمین فارغ کرنے پر غور

پی آئی اے شدید مالی بحران کا شکار،11ہزار ملازمین فارغ کرنے پر غور
پی آئی اے شدید مالی بحران کا شکار،11ہزار ملازمین فارغ کرنے پر غور

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سروسز کی بہتری کے دعوؤں کے باوجود قومی ایئرلائنز ایک بار پھر شدید ترین مالی بحران سے دوچار ہے جس کے بعدڈاو¿ن سائزنگ پر غور کیا جارہا ہے، گیارہ ہزار ملازمین کو نوکریوں سے فارغ کیے جانے کا امکان بھی ہے۔اے آر وائی کے مطابق پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز(پی آئی اے) کو پھر مالی مشکلات نے گھیر لیا ہے،ملازمین کو ابھی تک ستمبر کی تنخواہیں بھی ادا نہ کئے جانے کی اطلاعات ہیں جبکہ صورتحال کے پیش نظر ڈاؤن سائزنگ پر غور بھی شروع کردیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق اگر ڈاؤن سائزنگ کا فیصلہ ہوا تو قومی ادارے کے گیارہ ہزار ملازمین بےروزگار ہوجائیں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ستاون سال کی عمر کے حامل ملازمین کو بھی ریٹائرڈ کے ساتھ ساتھ گھر بیٹھے ڈائریکٹرز کو بھی فارغ کرنے پر غور کیا جارہا ہے۔چیئرمین پی آئی اے اعظم سہگل کا کہنا ہے کہ ادارے میں چھ سے سات ہزار ملازمین کی ضرورت ہے جبکہ اٹھارہ ہزار ملازمین کام کررہے ہیں۔یاد رہے کہ رواں سال فروری میں پی آئی اے ملازمین نے نجکاری کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے دفاتربند کردیئے تھے، فضائی آپریشن بھی کئی روز معطل رہا تھا۔

مزید :

قومی -