خالی مکان سے برآمد کی جانیوالی اسلحے کی کھیپ سے متعلق پولیس کی ابتدائی تفتیش سامنے آگئی

خالی مکان سے برآمد کی جانیوالی اسلحے کی کھیپ سے متعلق پولیس کی ابتدائی تفتیش ...
خالی مکان سے برآمد کی جانیوالی اسلحے کی کھیپ سے متعلق پولیس کی ابتدائی تفتیش سامنے آگئی

  

کراچی (آن لائن) کراچی کے علاقے عزیزآباد میں ایم کیوایم کے مرکز نائن زیروکے قریب خالی مکان سے برآمد کی جانے والی اسلحے کی کھیپ سے متعلق پولیس کی ابتدائی تفتیش سامنے آگئی، اسلحہ برآمد ہونے پر ایم کیو ایم لندن کے چار رہنماؤں کو بھی شامل تفتیش کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا،20سال کے دوران چھینا اور چوری کیا گیا اسلحہ کا ریکارڈ بھی طلب کرلیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق مقدمے کے اندراج سے قبل اعلیٰ پولیس حکام کا اجلاس میں ایم کیو ایم لندن کے چار رہنماؤں کو بھی شامل تفتیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اسلحہ کی برآمدگی کے حوالے سے ناظم آباد سے گرفتار ٹارگٹ کو بھی شامل تفتیش کیا جائے گا۔ دوسری جانب پولیس کی ابتدائی تفتیش بھی سامنے آگئی ہے جس کے مطابق نائن زیروکے قریب خالی مکان سے برآمد کی جانے والی اسلحے کی بڑی کھیپ سے بعض اسلحہ بارڈر سیکیورٹی فورس کا ہے۔ کئی ہتھیار جنوبی افریقہ سیٹ اپ کی معاونت سے حاصل کیے گئے۔

ابتدائی تفتیش میں پولیس نے انکشاف کیا ہے کہ برآمد شدہ اسلحہ ساؤتھ افریقہ سیٹ اپ کا تھا جبکہ اسلحہ اورگولہ بارود بھارتی خفیہ ایجنسی را کی مدد سے خریدا گیا۔ بی ایس ایف کے زیر استعمال بلٹ پروف جیکٹس بھی برآمد ہوئیں۔ملنے والے ہتھیاروں میں سرکاری اسلحہ ہونے کا بھی شبہ ہوا ہے۔ پولیس نے گزشتہ بیس سال کے دوران چھینے گئے سرکاری اسلحے کی تفصیلات طلب کرلیں۔ سرکاری اسلحے کے نمبرزبرآمد کیے گئے ہتھیاروں کے نمبرزسے چیک کیے جائیں گے۔

مزید :

کراچی -