’اب ایٹمی جنگ ہوگی‘ روس نے 4کروڑ لوگوں کے ساتھ مشقیں شروع کردیں، اب تک کا سب سے بڑا خطرہ!

’اب ایٹمی جنگ ہوگی‘ روس نے 4کروڑ لوگوں کے ساتھ مشقیں شروع کردیں، اب تک کا سب ...
’اب ایٹمی جنگ ہوگی‘ روس نے 4کروڑ لوگوں کے ساتھ مشقیں شروع کردیں، اب تک کا سب سے بڑا خطرہ!

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا کے ہر خطے میں کوئی نہ کوئی ایسا سنگین تنازع چل رہا ہے جو کسی بھی وقت جنگ پر منتج ہو سکتا ہے۔ امریکہ اور چین، امریکہ اور روس، چین اور فلپائن، جاپان اور بحر جنوبی چین کی ملکیت کے دوسرے دعوے دار، پاکستان اور بھارت، جنوبی کوریا اور شمالی کوریا،اس کے علاوہ شام ، عراق، یمن اور ترکی کی صورتحال۔ غرض ہرسمت جنگ کے بادل منڈلاتے نظر آ رہے ہیں، لیکن اب روس نے انتہائی خطرناک اعلان کر دیا ہے کہ دنیا کو کسی بھی وقت ایٹمی جنگ کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ یہی نہیں، روسی فوج نے عوام کے ساتھ مل کر کسی بھی ممکنہ ایٹمی حملے کی صورت میں عوامی دفاع کی مشقیں بھی شروع کر دی ہیں۔ان مشقوں میں عوام کو تیاری کروائی جائے گی کہ وہ کسی بھی ایٹمی، کیمیائی یا حیاتیاتی حملے کی صورت میں خود کو کیسے محفوظ رکھ سکتے ہیں۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق شام میں روسی افواج کی کارروائی کے نتیجے میں امریکا اور روس کے تعلقات میں بڑھتے ہوئے تناﺅ کے دوران روسی وزارت دفاع کے تحت چلنے والے نیوز چینل ”ویڈا ٹی وی“ نے گزشتہ ہفتے اپنی ایک رپورٹ میں کہا تھا کہ ” امریکہ کے ”ذہنی مریض“ ماسکو کے ایٹمی ہتھیاروں پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور کسی بھی وقت حملہ کر سکتے ہیں اور ایٹمی جنگ چھڑ سکتی ہے۔“رپورٹ کے مطابق عوامی دفاع، ہنگامی حالات اور قدرتی آفات سے نمٹنے کی یہ تربیتی مشقیں تین روز تک جاری رہیں گی اور ان میں 2لاکھ فوجی اور 4کروڑ عام شہری حصہ لیں گے۔

تیل کے کنویں ہاتھ سے نکلنے کے بعد داعش نے ایک ایسی چیز یورپ میں سمگل کرنی شروع کردی کہ جان کر آپ کی بھی ہنسی چھوٹ جائے گی

ایمرکوم کا اس حوالے سے اپنی ویب سائٹ پر کہنا ہے کہ ” عوام اور فوجیوں کو ان مشقوں میں ہنگامی حالات کے دوران تابکاری، کیمیائی اور حیاتیاتی حملوں سے بچاﺅ کی تربیت دی جائے گی۔ اس کے علاوہ عوامی عمارات میں آگ سے بچاﺅ، عوامی دفاع اور انسانی جانوں کی حفاظت کے لیے کیے گئے اقدامات کا جائزہ لیا جائے گا۔“رپورٹ کے مطابق ایٹمی ہتھیاروں کی تیاری میں استعمال ہونے والے مادے پلوٹونیم کے خاتمے کے حوالے سے روس کی جانب سے امریکہ کے ساتھ معاہدے کی معطلی کے بعد سے روس اور مغربی ممالک کے درمیان تعلقات کشیدہ ہیں اور شام میں روسی بمباری کے باعث امریکہ نے اس کے ساتھ مذاکراتی عمل بھی ختم کر رکھا ہے۔اس معاہدے کے تحت دونوں ممالک کو 34ٹن زائد نیوکلیائی مواد کو اپنے ری ایکٹرز میں جلا کر اس سے نجات حاصل کرنے کے لیے کہا گیا ہے۔واضح رہے کہ ملک گیر تربیتی مشقوں کے آغاز کے ساتھ ہی ”ایمر کوم“ نے ماسکو کی پوری آبادی کو ایٹمی حملے سے محفوظ رکھنے کے لیے دارالحکومت میں زیر زمین بنکرز تعمیر کرنے کا بھی اعلان کیا ہے۔ایٹمی حملے کی صورت میں 1کروڑ 20لاکھ لوگ ان بنکرز میں پناہ لے سکیں گے۔

مزید :

بین الاقوامی -