5 فٹ کی بھارتی خاتون جو تیسرے بچے کی پیدائش کے بعد صرف 2 فٹ کی رہ گئی، ایسا کیسے ممکن ہے؟ جواب جان کر آپ بھی چکراکررہ جائیں گے

5 فٹ کی بھارتی خاتون جو تیسرے بچے کی پیدائش کے بعد صرف 2 فٹ کی رہ گئی، ایسا کیسے ...
5 فٹ کی بھارتی خاتون جو تیسرے بچے کی پیدائش کے بعد صرف 2 فٹ کی رہ گئی، ایسا کیسے ممکن ہے؟ جواب جان کر آپ بھی چکراکررہ جائیں گے

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) بڑھتی عمر کے ساتھ انسان کی جسامت میں اضافہ تو سجھ میں آتا ہے لیکن اس بات کا تصورکرنا ہی انتہائی مشکل ہے کہ کسی انسان کی عمر بڑھنے کے ساتھ اس کی جسامت کم ہوتی جائے، اور حتیٰ کہ وہ ایک ننھے بچے کے برابر رہ جائے۔ یہ پر اسرار معاملہ بھارتی ریاست اترپردیش سے تعلق رکھنے والی خاتون شانتی دیوی کے ساتھ پیش آیا ہے جس کی تیزی سے کم ہوتی جسامت ڈاکٹروں کے لئے بھی معمہ بن گئی ہے۔

ویب سائٹ WWWNکی رپورٹ کے مطابق شانتی دیوی اور ان کے خاوند گنگا چرن کی شادی 35 سال قبل ہوئی۔ شادی کے وقت ان کا قد 5 فٹ تھا اور وہ ایک صحت مند خاتون تھیں۔ شادی کے بعد ان کے ہاں تین بچے پیدا ہوئے لیکن جب تیسرے بچے کی پیدائش ہوئی تو اس کے بعد شانتی دیوی کا قد حیرت انگیز طور پر کم ہونے لگا۔ جب ان کی جسامت میں ہوتی کمی واضح نظر آنے لگی تو ان کا خاوند انہیں ہسپتال لے کر گیا لیکن ڈاکٹروں کو اس مسئلے کی کوئی سمجھ نہ آئی۔ اس کے بعد چند سالوں کے دوران گنگا چرن اپنی اہلیہ کو بھارت کے کئی بڑے ہسپتالوں میں لے کر گیا لیکن آج تک کسی ڈاکٹر کو پتہ نہیں چلا کہ اس کے ساتھ کیا معاملہ پیش آرہا ہے۔

وہ بیماری جس میں انسان خلائی مخلوق جیسا نظر آنے لگتا ہے

شانتی دیوی کا جسم چھوٹا ہوتا چلا گیا اور حتیٰ کہ صورتحال یہ ہوگئی کہ اب وہ محض دو فٹ کی رہ گئی ہیں۔ ان کی ٹانگیں اور بازو اس قدر چھوٹے ہوگئے ہیں کہ وہ چلنے پھرنے اور روزمرہ کے کام کرنے کے قابل بھی نہیں رہی ہیں اور ہر وقت ایک چھوٹی سی چارپائی پر پڑی رہتی ہیں، جو خصوصی طور پر ان کے لئے تیار کی گئی ہے۔ گنگا چرن نے اپنی اہلیہ کی دردناک حالت میں بات کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت ان کی عمر 60 سال ہے اور اگر وہ مزید کچھ سال زندہ رہیں تو نجانے ان کا انجام کیا ہوگا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -