کراچی سے پکڑا جانا والا اسلحہ سیکیورٹی اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ،سی پیک پر وزیر اعظم نے اپنے وعدوں سے انحراف کیا :سینیٹر الیاس بلور

کراچی سے پکڑا جانا والا اسلحہ سیکیورٹی اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ...
کراچی سے پکڑا جانا والا اسلحہ سیکیورٹی اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ،سی پیک پر وزیر اعظم نے اپنے وعدوں سے انحراف کیا :سینیٹر الیاس بلور

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) اے این پی کے سینئر راہنماء سینیٹر الیاس احمد  بلور نے کہا ہے کہ کراچی میں پکڑ اجانیوالا سلحہ بحری جہازوں کے ذریعہ لایا گیا، اس میں’’ سیاسی جماعت‘‘ ملوث ہوسکتی ہے ،اسلحہ کا پکڑا جانا سیکیورٹی اداروں کی نکارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ،سی پیک کے حوالے سے وزیر اعظم اپنے کئے گئے وعدوں سے منحرف ہو گئے ہیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر الیاس بلور کا کہنا تھا کہ کراچی سے اتنی بھاری تعداد میں اسلحہ کا پکڑا جانا بذات خود سیکورٹی اداروں کی کارکردگی پر ایک سوالیہ نشان ہے، ٹرکوں میں بھر کر اتنا اسلحہ کیسے لایا گیا اور زیر زمین چھپایا گیا؟ اس کی تحقیقات ہونی چاہئے کہ یہ اسلحہ کون لیکر آیا اور س کا استعمال کہاں کیا جاناتھا ؟ سینیٹر الیاس بلور نے کہا کہ آج کے مشترکہ اجلاس میں حکومتی رکن کی جانب سے ناجائز بات کی گئی ، ہم سمجھتے ہیں کہ حکومت کو ایسی باتوں سے گریز کرنا چاہئے، ایسے رویوں سے غلط فہمیاں جنم لیتی ہیں اور مسائل میں اضافہ ہوتا ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں الیاس احمد بلور نے کہا کہ کانفرنسز، سیمینارز اور مشترکہ اجلاسوں میں قراردادیں پیش کی جاتی ہیں اور پاس بھی کر لی جاتی ہیں لیکن ان پر عمل درآمد نہیں کیا جاتا، جس کی بناء پر تمام پریکٹس بے معنی ہو کر رہ جاتی ہے ۔انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم میاں نواز شریف نے سی پیک کے حوالہ سے منعقدہونیوالے اجلاس میں بہت سے وعدے کیئے لیکن بعد میں منحرف ہو گئے ۔ انھوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے ہمارے ملک میں تو کوئی بڑی تبدیلی نہیںآئے گی لیکن کشمیر کے حوالے سے دنیا کو ایک اچھا پیغام چلا جائے گا ۔

مزید :

اسلام آباد -