پاکستان اور ترکی کے درمیان ثقافتی تبادلے ضروری ہیں، صوبائی وزیر

پاکستان اور ترکی کے درمیان ثقافتی تبادلے ضروری ہیں، صوبائی وزیر

لاہور(فلم رپورٹر)انفرادی واجتماعی سطح پر پاکستان اور ترکی میں موجود اخوت اور بھائی چارے کی فضاء کو ثقافتی وفودکے تبادلوں کے ذریعے مزید استحکام بخشا جا سکتا ہے جس کے لئے تمام تر وسائل برؤے کار لائے جائیں گے، پاکستان اور ترکی ہر شعبہ میں اپنے مربوط اورمنظم تعلقات کی وجہ سے بین الاقومی سطح پر مقتدر ریاستیں مانی جاتی ہیں۔ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر برائے اطلاعات و ثقافت فیاض الحسن چوہان نے گزشتہ روز ڈائریکٹر انسٹی ٹیوٹ آف ترکش کلچرل سنٹر اولاش کرتاشUlash Kartashکے ساتھ الحمراء کمیٹی روم میں باہمی تبادلہ خیال کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر چیئرمین الحمراء توقیر ناصر نے پاکستان اور ترکی کے درمیان ادب و ثقافت کے میدان میں دوطرفہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کے عزم کا اعادہ کیا،انھو ں نے کہاکہ پاکستان اور ترکی کے درمیان ادب و ثقافت سمیت ہر شعبہ میں باہمی تعلقات دوطرفہ اعتمادمیں اضافے کا باعث ہیں،دونوں برادر ممالک کے درمیان دوستی آزمودہ ہے،پاکستان اور ترکی کے درمیان ثقافتی تبادلے وقت کی ضرورت ہیں،پاکستان اور ترکی دونوں ممالک اعلی اقدار و امتیاز کے مالک ہیں۔ ڈائریکٹر انسٹی ٹیوٹ آف ترکش کلچرل سنٹر اولاش کرتاشUlash Kartashنے صوبائی وزیر برائے اطلاعات و ثقافت فیاض الحسن چوہان کو وزیر بننے پر مبارکباد دی اور حکومت کے اچھے اقدامات کرنے پر نیک تمناؤں کااظہار کیا۔

اس موقع پر سیکرٹری اطلاعات و ثقافت بلال احمد بٹ،ڈائریکٹر انسٹی ٹیوٹ آف ترکش کلچرل سنٹرکے میڈیا ایڈوایزرشکیل گیلانی بھی موجود تھے۔اس ملاقات کے موقع پر ڈائریکٹر انسٹی ٹیوٹ آف ترکش کلچرل سنٹر اولاش کرتاشUlash Kartashکو الحمراء آرٹس کونسل کا ماڈل یادگاری شیلڈ کے طور پر بھی دیا گیا۔

مزید : کلچر