انسداد خسرہ مہم کے انتظامات مکمل،17لاکھ بچوں کو ٹیکے لگائے جائیں گے

انسداد خسرہ مہم کے انتظامات مکمل،17لاکھ بچوں کو ٹیکے لگائے جائیں گے

لاہور(جنرل رپور ٹر)پنجاب میں 15اکتوبر سے 27اکتوبر تک انسداد خسرہ مہم چلائی جائے گی جس کے انتظامات کو حتمی شکل دے دی گئی ہے۔اس مہم کے دوران 6ماہ سے 7سال تک کی عمر کے ایک کروڑ90لاکھ بچوں کو خسرہ ویکسین کے ٹیکے لگائے جائیں گے۔میڈیا مہم کے حوالے سے عوام میں شعور اجاگر کرنے کے لیے میڈیا کا تعاون انسداد خسرہ مہم کو کامیاب بنانے میں اہم کردار ادا کرے گا۔ان خیالات کا اظہار ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز ڈاکٹر منیر احمد نے مقامی ہوٹل میں انسداد خسرہ مہم میں میڈیا کی ذمہ داریوں کے حوالے سے منعقدہ سمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ سیمینار میں یونیسف کے کنٹری ہیڈ ڈاکٹر کینڈی ،ڈین یونیورسٹی آف سنٹرل پنجاب پروفیسر ڈاکٹر مغیث الدین شیخ ودیگر نے شرکت کی۔

،یونیسف پنجاب کے ڈاکٹر طاہر منظور،ڈاکٹر تنویر،ڈاکٹر قرہ تلعین ،ایڈیشنل ڈائریکٹر ای پی آئی ڈاکٹر شکیل،مختلف تعلیمی اداروں سے تعلق رکھنے والے شعبہ ابلاغ کے طلبہ،میڈیا کے نمائندوں نے شرکت کی۔ڈاکٹر منیر احمد کا کہنا تھا کہ محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر یونیسف کے تعاون سے خسرہ کی بیماری کے خاتمے کیلے مہم چلارہے ہیں۔اس مہم پر پانچ ارب سے زائد رقم خرچ کی جا رہی ہے۔انھوں نے میڈیا کے نمائندوں سے کہا کہ وہ بچوں کو خسرہ کے موزوں مرض سے نجات دلانے کے لیے اس مہم کو قومی فریضہ سمجھتے ہوئے زیادہ سے زیادہ کردار ادا کریں تاکہ لوگوں میں شعور اجاگر کیا جا سکے۔ اس مو قع پر پروفیسرڈاکٹر مغیث الدین شیخ کا کہنا تھا کہ معاشرے کے تمام طبقات کو آن بورڈ لینے کی ضرورت ہے تاکہ صحت کا پیغام نچلی سطح تک پہنچ سکے اور ویکسین کے حوالے سے عوام میں پائی جانے والی غلط فہمیوں کو دور کیا جا سکے۔یونیسف کے کنٹری ڈائریکٹر ڈاکٹر کینیڈی کا کہنا تھا کہ آبادی کے لحاظ سے پنجاب پورے ملک کا نصٖف سے بھی زائد ہے اس لیے پنجاب میں ہونے والی سرگرمیوں کا پورے ملک میں تاثر جائے گا۔یونیسف پنجاب کے ڈاکٹر طاہر منظور نے کہا کہ یونیسف حکومت کے ساتھ تعاون کر رہا ہے۔تاکہ بچوں کا مستقبل محٖفوظ بنایا جا سکے۔سیمینار میں محکمہ صحت کے افسران اور میڈیا کے نمائندوں نے اظہار خیال کیا ،سیمینار کے اختتام پر مہم کو کامیاب بنانے کے حوالے سے تجاویز بھی دی گئی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1