صوبائی وزیر شوکت لالیکا کیخلاف نااہلی کی درخواست سماعت کیلئے منظور

صوبائی وزیر شوکت لالیکا کیخلاف نااہلی کی درخواست سماعت کیلئے منظور

ہارون آباد(نامہ نگار)تحریک انصاف کے صوبائی وزیر شوکت علی لالیکا کے خلاف ہائیکورٹ میں دائر نااہلی کی درخواست سماعت کے لیے منظور عدالت نے 12 اکتوبر کو فریقین طلب کرلیے درخواست گذار میاں عالم داد لالیکانے موقف اختیار کیا ہے کہ شوکت علی لالیکا نے اپنی تعلیمی اسناد کے حوالے سے جھوٹ بولا اپنے اثاثے چھپائے صادق اور امین نہیں رہے نااہل کیا جائے۔صوبائی وزیر میاں (بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

شوکت علی لالیکا کے خلاف نااہلی کی درخواست ہائیکورٹ میں سماعت کے لیے منظور کرلی گئی جسٹس ہائیکورٹ بہاولپور بینچ قاضی محمد امین احمد نے درخواست سماعت کے لیے منظور کرتے فریقین کو 12 اکتوبر کے دن طلب کرلیا پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما میاں عالم داد لالیکا ایم این اے نے لاہور ہائیکورٹ بہاولپور بینچ میں پٹیشن دائر کی تھی درخواست گذار نے موقف اختیار کیا کہ شوکت علی لالیکا نے بطور امیدوار ضلع نائب ناظم کاغذات جمع کرواتے ہوئے 2002 میں اپنی تعلیمی قابلیت میٹرک ظاہر کی تھی جوکہ اسی دورانیہ میں ضلع نائب ناظم منتخب ہوکر بطور کنوینر ہاوس چلاتے رہے جبکہ موصوف نے اسی عرصہ کے دوران 2002 سے 2005 تک برسٹن یونیورسٹی کوہاٹ سے ریگولر تعلیم کے ذریعے بی بی اے کی ڈگری حاصل کی ایک بندہ دو مختلف اداروں میں ایک ہی ٹائم کیسے حاضر رہے سکتا ہے شوکت علی لالیکا نے اپنی تعلیمی اسناد کے حوالے سے جھوٹ بولا جو صادق اور امین نہیں رہے درخواست گزار نے شوکت علی لالیکا پر اثاثے چھپانے اور جنرل انتخابات 2018 میں الیکشن کمیشن کے ضابطہ سے زائد انتخابی مہم پر خرچ کرنے سے متعلق بھی الزام عائد کیے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر