لیاقت پور : 2ماپ کی تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر سینٹری سٹاف کا مظاہرہ

لیاقت پور : 2ماپ کی تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر سینٹری سٹاف کا مظاہرہ

لیاقت پور(نامہ نگار)دوماہ سے تنخواہیں نہ ملنے پر میونسپل کمیٹی لیاقت پور کے سینٹری سٹاف کا احتجاجی مظاہرہ، سوموار تک تنخواہیں چلت نہ کی گئیں تو کام بند کردیاجائے گا مظاہرین کا الٹی میٹم، میونسپل کمیٹی لیاقت پور کے درجنوں ملازمین نے پریس کلب لیاقت پور آکر چیف آفیسر کے خلاف (بقیہ نمبر44صفحہ12پر )

احتجاجی مظاہرہ کیا اور شدید نعرہ بازی کی اور بتایا کہ انہیں گذشتہ دوماہ سے تنخواہیں ادا نہیں کی گئیں۔ جس کی وجہ سے ان کے گھروں میں فاقوں کا راج ہے۔ دکانداروں نے ادھار دینا بند کردیاہے۔ بچے دودھ نہ ملنے پر بلکتے رہتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ چیف آفیسر سے تنخواہوں کی بابت بات کی گئی تو انہوں نے دھمکیاں دیکر دفتر سے نکوادیا اور کہاکہ اگر نوکری کرنی ہے تو ڈیوٹی کرتے رہو ورنہ برخاست کردیاجائے گا۔ مظاہرین نے الزام عائد کیا کہ میونسپل کمیٹی کے افسران ٹھیکیداروں کو ادائیگیاں کررہے ہیں کیونکہ ان میں انہیں بھاری کمیشن ملتا ہے۔ ملازمین کی تنخواہیں بھی ٹھیکیداروں کو ادا کردی گئی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ عملہ صفائی کو نہ تو اوورٹائم ملتا ہے اور نہ ہی غمی، خوشی یا بیماری کی صورت میں کوئی چھٹی دی جاتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ نگران صفائی بھی چھوٹے اہلکاروں کو دھمکیاں دیتے ہیں مظاہرین نے مزید کہاکہ تبدیلی کی دعوے دار حکومت کے دور کا آغاز بھی غریب کش پالیسوں سے ہورہا ہے۔ میونسپل کمیٹی انہیں ایک ماہ کی تنخواہ دے کر ٹرخانہ چاہتی ہے جو کہ زیادتی کے مترادف ہے ۔ انہوں نے خبردار کیاکہ اگر سوموار تک دو ماہ کی تنخواہ چلت نہ کی گئی تو وہ کام بند کردیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری چیف آفیسر اور چیئرمین میونسپل کمیٹی پر عائد ہوگی۔دوسری طرف چیف آفیسر ارشد محمود تتلہ نے بتایا کہ ملازمین کو سوموار کے دن ایک ماہ کی تنخواہ ادا کردی جائے گی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر