شہباز شریف کو بہت پہلے گرفتار کرلینا چاہئے تھا، خرم نواز گنڈا پور

شہباز شریف کو بہت پہلے گرفتار کرلینا چاہئے تھا، خرم نواز گنڈا پور

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) عوامی تحریک کے سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈا پور نے شہباز شریف کی گرفتاری پر اپنے رد عمل میں کہا ہے کہ شہباز شریف کو بہت پہلے گرفتار کر لیا جانا چاہیے تھا۔شریفوں کی کرپشن کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں ہے۔احد چیمہ اور فواد حسن فواد شہباز شریف کے فرنٹ مین ہیں۔شہباز شریف کی سانحہ ماڈل ٹاؤن کے قتل عام میں گرفتاری کے منتظر ہیں۔جنہوں نے گاجریں کھائیں انکو اب نیب کی پھکی سے ہی آرام آئے گا۔قومی دولت لوٹنے والوں کا کڑا احتساب ہونا چاہیے۔جب احد چیمہ کو نیب نے گرفتار کیا تھا تو اس وقت شہباز شریف نے پنجاب کی ساری بیوروکریسی کو احتجاج پر اکسایا تھا ۔ تاریخ میں پہلی بار سول سیکرٹریٹ کی تالہ بندی کروا دی تھی۔احد چیمہ کیلئے شہباز شریف کی اس بے چینی اور اضطراب سے بخوبی اندازہ ہو گیا تھا کہ نیب نے شہباز شریف کی دکھتی رگ پر ہاتھ رکھ دیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ نیب نے تفتیش اور پراسیکیوشن کے مرحلے پر کمزوری یا غفلت کا مظاہرہ کیا تو قوم کبھی معاف نہیں کریگی،نیب کے پاس اپنی ساکھ کی بحالی اورلوٹی گئی قومی دولت کی واپسی کے لیے یہ بہترین موقع ہے،خرم نواز گنڈا پور نے کہا کہ شہباز شریف جیسے قومی مجرموں کو پہلے گرفتار کر لیا جاتا تو سانحہ ماڈل ٹاؤن نہ ہوتا۔شریف برادران نے اپنے دور اقتدار میں پولیس،عدالتوں سمیت حکومت کے ماتحت اداروں کو سیاست میں ملوث کر کے ان کی کریڈیبلیٹی کو نقصان پہنچایا۔

خرم نواز

مزید : صفحہ آخر