سندھ کے 70فیصد لوگ گندا پانی پینے پر مجبور ہیں ،خرم شیر زمان

سندھ کے 70فیصد لوگ گندا پانی پینے پر مجبور ہیں ،خرم شیر زمان

کراچی (اسٹاف رپورٹر)تحریک انصاف کراچی ڈویژن کے صدر خرم شیر زمان نے کہا ہے کہ اربوں خرچ کیے اور آج بھی سندھ میں ستر فیصد لوگ گندہ پانی پینے پر مجبور ہیں۔ اگر پی پی والوں نے سندھ کے مسائل حل نہ کیے تو ان کے اختیارات چھین لیے جائیں گے۔ عمران خان پورے پاکستان کے وزیرا عظم ہیں۔ اگر سندھ کے مسائل حل نہ ہوئے تو ہم سندھ حکومت کے لیے بڑے مسائل پیدا کردیں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے حلقہ این اے 247 سے پاکستان تحریک انصاف کے نامزد امیدوار آفتاب صدیقی اور پی ایس 111 کے نامزد امیدوار شہزاد قریشی نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ پی ٹی آئی رہنما خرم شیر زمان نے کہا کہ مجھے اسمبلی میں پانچ سال ہوچکے ہیں۔ میں آفتاب صدیقی اور شہزاد قریشی کے ساتھ فخر محسوس کرتا ہوں۔ ان کا جذبہ قابل تحسین ہے۔ یہ لوگ اپنے ذاتی وسائل اور خرچ سے عوام کی فلاح و بہبود کا کام کر رہے ہیں۔ آفتاب صدیقی بیس ہزار گیلن پانی روزانہ کی بنیاد پر لوگوں کو فراہم کر رہے ہیں۔ انہوں نے تینوں حلقوں میں ٹریکٹر ٹرالی دی تاکہ کچرا اٹھایا جائے۔ پانی کی لائنیں لگائی جائیں۔ اس شہر کی بربادی کی ذمہ دار پی پی حکومت ہے۔ گیارہواں سال ان کی حکومت کا ہے۔ انہوں نے اربوں خرچ کیے اور آج بھی سندھ میں ستر فیصد لوگ گندہ پانی پینے پر مجبور ہیں۔ اگر پی پی والوں نے سندھ کے مسائل حل نہ کیے تو ان کے اختیارات چھین لیے جائیں گے۔ عمران خان پورے پاکستان کے وزیرا عظم ہیں۔ اگر سندھ کے مسائل حل نہ ہوئے تو ہم سندھ حکومت کے لیے بڑے مسائل پیدا کردیں گے۔ عوام کے بنیادی حقوق پورے نہ ہوئے توعمران خان یہ نہیں دیکھیں گے کہ سندھ پر پی پی کی حکومت ہے۔ ہم نے عوام کے مسائل حل کرنے ہیں۔ ہم نے پانی کے مسائل حل کرنے ہیں۔ کراچی کے اسٹریٹ کرائمر پر ہم نے قابو پانا ہے۔ ڈسٹرکٹ ساتھ اور ایسٹ کی صفائی سے کچھ نہیں ہوگا۔ شہری پورے کراچی میں رہتے ہیں اور حالات بہت خراب ہیں۔ کراچی تحریک انصاف کا شہر ہے۔ ہم ثابت کریں گے یہ شہر ہمارا ہے۔ کراچی سے سب سے زیادہ ایم پی ایز تحریک انصاف کے ہیں۔ اگر سندھ حکومت کو کام کرنا ہے تو کرے، نہیں کرنا تو بے شک نہ کرے۔ ہم اس شہر کے سارے کام کریں گے۔ ہم پانچ سال میں کراچی کے تمام مسائل حل کریں گے۔ ہماری بلدیاتی انتخابات میں تیاری شروع ہوچکی ہے۔ کراچی سے میئر تحریک انصاف کا ہوگا۔ ہم سب اسٹیک ہولڈرز سے مل کر کراچی کو آگے لے کر جائیں گے۔ پی ٹی آئی رہنما آفتاب صدیقی نے کہا کہ اس وقت کراچی خصوصا میرے حلقے کی صورتحال بہت تشویش ناک ہے۔ پانی، سیوریج، کچرا کنڈی اور ناجائز قبضے کے مسائل ہیں ۔ کوئی ادارہ کام کرنے کو تیار نہیں۔ ادارے تباہ و برباد ہو چکے ہیں۔ ادارے ایک دوسرے پر الزام تراشی کرتے رہتے ہیں۔ میں نے جو تھوڑا بہت کام کروایا ہے، وہ عزم و ہمت سے ہوسکتا تھا۔ پچھلے دس سال میں پانی اور سیوریج کا کوئی منصوبہ مکمل نہیں ہوا۔ کے فور 25 سے 43بلین پر چلا گیا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر