کبھی خوشی کبھی غم ، شہباز شریف کی گرفتار پر مسلم لیگ (ن) کے کارکن ناراض

کبھی خوشی کبھی غم ، شہباز شریف کی گرفتار پر مسلم لیگ (ن) کے کارکن ناراض
کبھی خوشی کبھی غم ، شہباز شریف کی گرفتار پر مسلم لیگ (ن) کے کارکن ناراض

  

دبئی (طاہر منیر طاہر) 11 ستمبر کو محترمہ کلثوم نواز کی رحلت نے لیگیوں کو رنجیدہ کر دیا، ابھی وہ اس غم میں مبتلا تھے کہ میاں محمد نواز شریف ، مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی رہائی نے لیگیوں کے چہروں پر مسکراہٹ بکھیر دی۔ ابھی یہ خوشی کم نہ ہونے پائی تھی کہ کل 15اکتوبر کو مسلم لیگ (ن) کے صدر  اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف کی گرفتاری نے ایک بار پھر لیگیوں کو رنج و غم میں مبتلا کر دیا۔

شہباز شریف کی گرفتاری پر مسلم لیگ (ن) متحدہ عرب امارات سر ا پا احتجاج کر رہی ہے اور کارکنان شدید ناراض ہیں۔ مسلم لیگ (ن) یو اے ای کے صدر چودھری محمد الطاف نے میاں محمد شہباز شریف کی گرفتاری پر سنجیدگی کے ساتھ نوٹس لیتے ہوئے ان کی گرفتاری کی پر زور مذمت کی ہے۔ چودھری محمد الطاف نے کہا کہ حکومت مسلم لیگ (ن) سے بدلے کی سیاست کر رہی ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے اعلیٰ رہنماؤں کی گرفتاری اس بات کا ثبوت ہے کبھی سابق وزیراعظم کو گرفتار کیا جاتا ہے تو کبھی انتقامی سیاست کی خاطر سابق وزیراعظم اعلیٰ پنجاب کو گرفتار کیا جاتا ہے۔ چودھری محمد الطاف نے کہا کہ دونوں میاں صاحبان پر کوئی کرپشن ثابت نہیں ہے لہٰذا اعلیٰ اخلاق معیار کا مظاہرہ کرتے ہوئے شہباز شریف کو رہا کیا جائے۔

مزید : عرب دنیا /سیاست