یہ افغانستان کی ملالہ ہے، اس کی کہانی جان کر آپ کا بھی دل دکھی ہوجائے

یہ افغانستان کی ملالہ ہے، اس کی کہانی جان کر آپ کا بھی دل دکھی ہوجائے
یہ افغانستان کی ملالہ ہے، اس کی کہانی جان کر آپ کا بھی دل دکھی ہوجائے

  

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک) ہماری ملالہ نے تو شدت پسندوں کا خوب مقابلہ کیا، اور پھر دنیا میں مقام بنایا، مگر اب برطانیہ میں زیرتعلیم ہیں اور نجانے کب وطن واپس آئیں گی۔ دریں اثناء، جبکہ ہماری اپنی ملالہ سات سمندر پار ہیں، ہمسایہ ملک افغانستان میں ایک اور ملالہ سامنے آ گئی ہیں۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق ’افغان ملالہ‘ کا نام بریشنا موسیٰ زئی ہے، جنہوں نے معذوری اور جان کو لاحق سنگین خطرات کے باوجود اپنی تعلیم جاری رکھ کر ایک مثال قائم کر دی ہے۔ بریشنا کی ایک ٹانگ پولیو کے باعث معذوری کی شکار تھی مگر دوسری ٹانگ طالبان کی گولی کا نشانہ بن گئی۔ چلنے پھرنے سے مکمل طور پر معذور ہو جانے کے باوجود اس لڑکی نے ہمت ہارنے سے انکار کر دیا، بلکہ دوسروں کے لئے ہمت و حوصلے کی مثال بن گئیں۔

بریشنا 2016ءمیں امریکن یونیورسٹی آف افغانستان کی طالبہ تھیں اور ایک دن جب وہ یونیورسٹی کی مسجد میں نماز کی ادائیگی کے لئے جارہی تھیں تو دہشتگردوں نے حملہ کردیا۔ اس واقعے میں ان کی ٹانگ پر گولی لگی، جبکہ دوسری ٹانگ پہلے ہی پولیو سے متاثرہ تھی۔

بریشنا نے بتایا کہ ”اس حملے کے بعد پہلے تو مجھے اپنی امید دم توڑتی ہوئی محسوس ہوئی اور میں بہت خوفزدہ تھی۔ مجھے لگ رہا تھا کہ اب میں یونیورسٹی نہیں جاسکوں گی اور میری تعلیم کا سلسلہ ختم ہوگیا۔ خوف کے باعث میں اپنے گھر سے بھی نہیں نکلنا چاہتی تھی۔ میری ذہنی حالت بھی اچھی نہیں تھی اور رات بھر نیند نہیں آتی تھی۔ اپنے علاوہ مجھے اپنی فیملی کے بارے میں بھی خدشات لاحق تھے، مگر میں خوش قسمت ہوں کہ میرے گھر والوں نے مجھے سپورٹ کیا اور بالآخر میں پھر سے ہمت کے ساتھ کھڑی ہونے کے قابل ہوئی۔ “

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی