نعلین مبارک چوری ہونے کا معاملہ، چیف جسٹس ثاقب نثار نے ایسا کام کر دیا کہ آپ بھی بے اختیار کہہ اٹھیں گے ”سبحان اللہ“

نعلین مبارک چوری ہونے کا معاملہ، چیف جسٹس ثاقب نثار نے ایسا کام کر دیا کہ آپ ...
نعلین مبارک چوری ہونے کا معاملہ، چیف جسٹس ثاقب نثار نے ایسا کام کر دیا کہ آپ بھی بے اختیار کہہ اٹھیں گے ”سبحان اللہ“

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) سپریم کورٹ نے بادشاہی مسجد سے نعلین مبارک چوری ہونے کے معاملے میں ڈی جی اوقاف کو 7 اکتوبر  بروزاتوار کوطلب کر لیا ۔ 

نجی ٹی وی چینل’’ جیونیوز‘‘ کے مطابق سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں بادشاہی مسجد سے نعلین مبارک چوری ہونے کے معاملے کی سماعت چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار  نے کی ، چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ نعلین مبارک کی حفاظت نہیں کر سکتے تو کس بات کے مسلمان ہیں ،یہ کسی مسجد سے جوتی چوری کا معاملہ نہیں ہے،پتانہیں نعلین مبارک کی کیا بےحرمتی ہو رہی ہو گئی،چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ درباروں پرغلوں میں جمع ہونیوالےچندوں سےمتعلق کیارپورٹ ہے،پنجاب حکومت نے کسی کو اوقاف کی وزارت دی ہے ۔

جس پر ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل نے کہاکہ 2002سےاس حوالے سےکوئی تحقیقات نہیں کی گئیں،پہلی بارتحقیقات میں بھی کسی کوذمےدار نہیں ٹھہرایا گیا،پنجاب میں 82کروڑ روپےچندہ اکٹھا ہوتاہے۔نمائندہ محکمہ اوقاف نے جواب دیا کہ صوبائی وزیرنہیں ہے معاملات کوڈی جی اوقاف دیکھتے ہیں، جس پر چیف جسٹس نے ڈی جی اوقاف کو کل طلب کر لیا۔

مزید : قومی