فالودہ فروش اور طالب علم کے بعد مزدور کا بینک اکاﺅنٹ بھی سامنے آ گیا مگر اس میں رقم کی بجائے کیا نکلا؟ جان کر مزدور کے ہی ہوش اڑ گئے کیونکہ۔۔۔

فالودہ فروش اور طالب علم کے بعد مزدور کا بینک اکاﺅنٹ بھی سامنے آ گیا مگر اس ...
فالودہ فروش اور طالب علم کے بعد مزدور کا بینک اکاﺅنٹ بھی سامنے آ گیا مگر اس میں رقم کی بجائے کیا نکلا؟ جان کر مزدور کے ہی ہوش اڑ گئے کیونکہ۔۔۔

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) کراچی میں جعلی بینک اکاؤنٹ کے ذریعے فراڈ کا ایک اور کیس سامنے آگیا، کورنگی کے مزدور کے نام سے اکاؤنٹ کھول کر قرضہ لینے کا انکشاف ہوا ہے۔نجی ٹی وی چینل” دنیانیوز‘ کے مطابق کراچی میں فالودہ فروش ،جھنگ میں طالب علم کے بعد مزدور کے شناختی کارڈ پر بینک اکاؤنٹ کھولنے کا انکشاف ہوا ہے، جعلی اکاؤنٹ میں کوئی خطیر رقم نہ تھی بلکہ الٹا قرضے کا بوجھ تھا جو سر پر پڑا تو غریب کے ہاتھ پاؤں پھول گئے۔

کورنگی کے رہائشی شاہد کو اپنے نام پر اکاؤنٹ ہونے کا تب پتہ چلا، جب بینک سے لون کی ادائیگی کے لیے کال آئی، جعلی اکاؤنٹ پر کریڈٹ کارڈ بھی لیا گیا تھا،کئی سال قبل اس نے اپنا شناختی کارڈ رشتے دار کو نوکری کے حصول کے لیے دیا تھا، بینک سے رابطہ پر پتہ چلا کہ اکاؤنٹ پر رشتے داروں کا ہی پتہ درج ہے، متاثرہ شہری نے فراڈ کے حوالے سے ایف آئی اے اور بینک کے ہیڈ آفس میں درخواست بھی جمع کرا دی ہے، شاہد کا کہنا ہے کہ معاملے کی تحقیقات کر کے فراڈ میں ملوث افراد کو فوری گرفتار کیا جائے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /علاقائی /سندھ /کراچی