اے این ایف رانا ثناءاللہ کے خلاف ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہی،عظمیٰ بخاری

اے این ایف رانا ثناءاللہ کے خلاف ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہی،عظمیٰ بخاری

  

لاہور (سٹی رپورٹر)مسلم لیگ (ن) پنجاب کی سیکرٹری اطلاعات عظمیٰ بخاری نے کہا ہے کہ اے این ایف راناثناءاللہ کےخلاف ایک بھی ثبوت اور ویڈیو عدالت میں پیش کرنے میں ناکام رہی ہے۔اے این ایف نے عدالت میں خود کہا شہریار آفریدی کا اس کیس سے کوئی تعلق نہیں ہے۔رانا ثناءاللہ کی گرفتاری کو 95دن ہو گئے لیکن ان سے ابھی تک تفتیش نہیں کی گئی۔جج تبدیل کرنے کے بعد بھی ٹرائل شروع نہیں ہو سکا۔۔شہریار آفریدی صاحب ثبوت آپ کو ہی عدالت میں پیش کرنا پڑیں گے۔

مسلم لیگ (ن) پنجاب کی سیکرٹری اطلاعات عظمیٰ بخاری نے وفاقی وزیر شہریار آفریدی کے بیان پر اپنے ردعمل میں کہارانا ثناءاللہ کیس میں شہریار آفریدی کا صرف اللہ کو جان دینے کا ارادہ سامنے آیا اس کے علاوہ کچھ سامنے نہیں آسکا۔

۔شہریار آفریدی پریس کانفرنس اور پارلیمنٹ میں بہت دعوے کرچکے ہیں۔عدالت آج بھی شہریار آفریدی کے ثبوتوں اور ویڈیو کا انتظار کررہی ہے۔سیف سٹی اتھارٹی کے ریکارڈ کے مطابق رانا ثناءاللہ کی گاڑی بابو صابو انٹرچینج سے یونیورسٹی تک پہنچی۔رانا ثناءاللہ نے عدالت میں خود کہا میری گاڑی سے کوئی برآمدگی نہیں مجھے بغیر برآمدگی کے گرفتار کیا۔عدالت نے رانا ثناءاللہ کے بیان کو ریکارڈ کا حصہ بنانے کا کہا۔رانا ثناءاللہ کا یہ بیان ان کو موقف کو تقویت دیتا ہے۔شہریار آفریدی کیس کے ٹرائل کا انتظار نہ کریں بلکہ مستقل جج تعینات کرکے کیس کو پاءتکمیل تک پہنچنے دیں۔راناثناءاللہ کے کیس کی 10سماعتیں ہو چکی ہیں لیکن شہریار آفریدی لاپتہ ہیں۔ حقیقت میں رانا ثناءاللہ کےخلاف کسی بھی ثبوت یا ویڈیو کا وجود ہی نہیں ہے ۔رانا ثناءاللہ کو صرف نوازشریف کے ساتھ کھڑے ہونے کی سزا مل رہی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -