مختلف حادثات واقعات میں 14 افراد جاں بحق‘ بچے کی لاش برآمد

مختلف حادثات واقعات میں 14 افراد جاں بحق‘ بچے کی لاش برآمد

  

ملتان‘ مظفر گڑھ‘ ڈیرہ غازیخان‘ حاصل پور‘ رحیمیار خان(خبر نگار خصوصی‘بیورو رپورٹ‘ نمائندگان پاکستان) نہر ہیڈ نو بہار میں 7 سالہ کاشف ڈوب گیا تھا ریسکیو 1122 کے زیر اہتمام لاش کی تلاش کے لئے آپریشن جاری تھا کہ دوران ایک اور بچے کی لاش ملی ہے۔نامعلوم بچے کی عمر 14 سال کے قریب ہے۔موقع پر موجود کاشف کے لواحقین کے مطابق یہ انکے بچے کی۔لاش نہیں ہے ان کے بچے کی عمر 7 سال ہے۔ریسکو نے ملنے والی(بقیہ نمبر34صفحہ12پر)

لاش کے متعلق پولیس کو آگاہ کر کے لاش نشتر منتقل کر دی ہے جبکہ 7 سالہ کاشف کی لا ش کی تلاش جاری ہے۔مظفرگڑھ میں تیزرفتار ٹرک نے موٹر سائیکل کو ٹکر ماردی،حادثے میں موٹر سائیکل پر سوار ایک بچے سمیت3 افراد جاں بحق ہوگئے،حادثے میں ایک شخص زخمی بھی ہوا.مظفرگڑھ میں ملتان روڈ پر سنکی فلڈ بند کے قریب تیزرفتار ٹرک نے موٹر سائیکل کو ٹکر ماردی.ریسکیو کیمطابق حادثے میں موٹر سائیکل پر سوار 3 افراد موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے،جاں بحق ہونے والے افراد میں ایک بچہ بھی شامل ہے.ریسکیو کیمطابق حادثے میں موٹر سائیکل پر سوار ایک شخص زخمی بھی ہوا.ریسکیو نے جاں بحق ہونے والے افراد کی لاشوں اور زخمی کو ڈی ایچ کیو ہسپتال مظفرگڑھ منتقل کردیا.واقعے کے بعد ٹرک ڈرائیور فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا،پولیس نے قانونی کاروائی شروع کردی ہے جاں بحق ہونے والوں میں 30سالہ منزہ 2سالہ گل جنت17سالہ زوہیب شامل ہیں جبکہ 5سالہ بیٹا زخمی ہے۔ سمینہ چوک کھاکھی موڑ کے قریب ڈیرہ غازیخان سے سمینہ جانے والے تیز رفتار کارڈرائیور نے غفلت اور لاپرواھی کا مظاھرہ کرتے ھوئے سامنے سے آنے والے موٹرسائیکل کو ٹکر ماری، حادثہ کے نتیجہ میں موٹرسائیکل سوار نوجوان محمد عارف زخمی ھوگیا اور زخموں کی تاب نہ لاتے ھوئے موقعہ پر ھی جانبحق ھوگیا پولیس نے جائے حادثہ پر پہنچ کر لاش ورثاء کے حوالے کرتے ھوئے کار قبضہ میں لیکر رپٹ درج کرلی ھے جبکہ کار ڈرائیور موقع سے فرار ھونے میں کامیاب ھو گیا۔حاصل پور کے قریب ہائی وے بہاولپور روڈ پر دوکاروں کے حادثہ میں موٹرسائیکل سوار دو بھائی موقع پر جاں بحق ہو گئے۔تفصیل کے مطابق غریب محلہ حاصل پور کے رہائشی محمد شعبان اور محمد رضوان اپنے موٹرسائیکل 9844 پر سوار ہو کر دوائی لینے کے لیئے ڈاکٹر کے پاس جارہے تھے کہ حاصل پو ر کے قریب بہاولپور ہائی وے روڈ پر رحمان ٹاؤن کے قریب تیز رفتاری کے باعث دو کاریں آپس میں ٹکرا گئی اس دوران ایک کار موٹرسائیکل سوار دونوں بھائیوں کے اوپر چڑھ گئی جس کے نتیجہ میں دونوں بھائی محمدشعبان اور محمدرضوان شدید زخمی ہو گئے زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر دم توڑ گئے دونوں بھائیوں کی لاشیں گھر پہنچنے پر گھر میں کہرام مچ گیا۔جبکہ ایک بھائی امریکہ سے تعلیم حاصل کر کے گھر آیا ہوا تھا جبکہ کاروں کے حادثہ میں لیاقت علی اور محمد خالد شدید زخمی ہو گئے جن کو طبی امداد کے لیئے سول ہسپتال حاصل پو رمیں داخل کردیا گیا جہاں ایک شدید زخمی لیاقت علی کی حالت نازک بتائی جاتی ہے جبکہ کار ڈرائیور موقع سے فرار پولیس نے مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے پوسٹمارٹم کے بعد لاشیں ورثا کے حوالے کر دی گئیں۔ٹریفک کے مختلف حادثات میں شدید زخمی ہونے والی خاتون سمیت چارفرار دم توڑگئے جبکہ 47زیرعلاج۔ تفصیل کے مطابق پہلا حادثہ راجن پور کی رہائشی25سالہ نذیراں مائی کے ساتھ پیش آیا جو اپنے بھائی کے ہمراہ موٹرسائیکل پرسوار ہوکر جارہی تھی کہ چادر ٹائر میں پھنس جانے کے باعث سر کے بل سڑک پر جاگری اور شدید زخمی ہوگئی، دوسراحادثہ ڈہرکی (سندھ) کے رہائشی16سالہ محمد مبشر کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹرسائیکل پرسوار ہوکر جارہاتھا کہ سامنے سے آنیوالی تیز رفتار ٹریکٹرٹرالی سے جاٹکرایا اور شدید زخمی ہوگیا، تیسرا حادثہ اقبال آباد کے رہائشی 40سالہ مختیار احمد کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹرسائیکل پرسوار ہوکر قومی شاہراہ پرجارہاتھاکہ پیچھے سے آنیوالی تیز رفتار کار نے ٹکر ماردی جس کے نتیجہ میں وہ شدید زخمی ہوگیا، جبکہ چوتھا حادثہ خانپور کے رہائشی30سالہ امیر بخش کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹر سائیکل پرسوار ہوکر کام کے سلسلہ میں جارہاتھا کہ تیز رفتاری کے باعث سامنے سے آنیوالے پھٹہ رکشہ سے جاٹکرایا اور شدید زخمی ہوگیا، ورثاء نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں تمام زخمی افراد جانبرنہ ہوپائے اور دم توڑگئے جبکہ مختلف حادثات میں زخمی ہونے والے47افراد جن میں بستی امانت علی کارہائشی5سالہ اشعرعلی، آدم صحابہ کی28سالہ ماریہ بی بی، خیر پور کھڈالی کی 20سالہ عارفہ بی بی، راجن پور کی50سالہ شریفاں بی بی، چک111پی غربی کا15سالہ کالا، ہیڈ فرید کا30سالہ سائیں داد، حبیب کالونی کا39سالہ محمدمقصود، چک88کا 15سالہ افضان، 13سالہ محمد ذیشان، 35سالہ محمدطاہر، بستی امانت علی کا35سالہ محمد محبوب، چک84پی کا45سالہ محمداحمد، بلیئجیم چوک کا25سالہ محمد عثمان، غلہ منڈی کا35سالہ جمیل احمد، چک112/1L کا65سالہ محمد منوروغیرہ شامل ہیں۔ ان افراد کو ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔شوہر سے جھگڑااور مالی پریشانی سے دلبرداشتہ ہوکر دوخواتین سمیت تین افراد نے کالا پتھر اور زہریلا سپرے پی کر خودکشی کرلی۔ تفصیل کے مطابق لیاقت پورکی رہائشی28سالہ زہراء بی بی، دھریجہ پھاٹک کی 28سالہ ثمینہ بی بی اور صادق آباد کارہائشی25سالہ راشد علی نے شوہر سے جھگڑا اورمالی پریشانیوں سے دلبرداشتہ ہوکر کالاپتھر اور زہریلا سپرے پی لیا، حالت غیر ہونے پر ورثاء نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود تینوں افراد جانبرنہ ہوپائے اور جسم میں زہر پھیل جانے کے باعث دم توڑگئے۔ ملتان‘ مظفر گڑھ‘ ڈیرہ غازیخان‘ حاصل پور‘ رحیمیار خان(خبر نگار خصوصی‘بیورو رپورٹ‘ نمائندگان پاکستان) نہر ہیڈ نو بہار میں 7 سالہ کاشف ڈوب گیا تھا ریسکیو 1122 کے زیر اہتمام لاش کی تلاش کے لئے آپریشن جاری تھا کہ دوران ایک اور بچے کی لاش ملی ہے۔نامعلوم بچے کی عمر 14 سال کے قریب ہے۔موقع پر موجود کاشف کے لواحقین کے مطابق یہ انکے بچے کی۔لاش نہیں ہے ان کے بچے کی عمر 7 سال ہے۔ریسکو نے ملنے والی لاش کے متعلق پولیس کو آگاہ کر کے لاش نشتر منتقل کر دی ہے جبکہ 7 سالہ کاشف کی لا ش کی تلاش جاری ہے۔مظفرگڑھ میں تیزرفتار ٹرک نے موٹر سائیکل کو ٹکر ماردی،حادثے میں موٹر سائیکل پر سوار ایک بچے سمیت3 افراد جاں بحق ہوگئے،حادثے میں ایک شخص زخمی بھی ہوا.مظفرگڑھ میں ملتان روڈ پر سنکی فلڈ بند کے قریب تیزرفتار ٹرک نے موٹر سائیکل کو ٹکر ماردی.ریسکیو کیمطابق حادثے میں موٹر سائیکل پر سوار 3 افراد موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے،جاں بحق ہونے والے افراد میں ایک بچہ بھی شامل ہے.ریسکیو کیمطابق حادثے میں موٹر سائیکل پر سوار ایک شخص زخمی بھی ہوا.ریسکیو نے جاں بحق ہونے والے افراد کی لاشوں اور زخمی کو ڈی ایچ کیو ہسپتال مظفرگڑھ منتقل کردیا.واقعے کے بعد ٹرک ڈرائیور فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا،پولیس نے قانونی کاروائی شروع کردی ہے جاں بحق ہونے والوں میں 30سالہ منزہ 2سالہ گل جنت17سالہ زوہیب شامل ہیں جبکہ 5سالہ بیٹا زخمی ہے۔ سمینہ چوک کھاکھی موڑ کے قریب ڈیرہ غازیخان سے سمینہ جانے والے تیز رفتار کارڈرائیور نے غفلت اور لاپرواھی کا مظاھرہ کرتے ھوئے سامنے سے آنے والے موٹرسائیکل کو ٹکر ماری، حادثہ کے نتیجہ میں موٹرسائیکل سوار نوجوان محمد عارف زخمی ھوگیا اور زخموں کی تاب نہ لاتے ھوئے موقعہ پر ھی جانبحق ھوگیا پولیس نے جائے حادثہ پر پہنچ کر لاش ورثاء کے حوالے کرتے ھوئے کار قبضہ میں لیکر رپٹ درج کرلی ھے جبکہ کار ڈرائیور موقع سے فرار ھونے میں کامیاب ھو گیا۔حاصل پور کے قریب ہائی وے بہاولپور روڈ پر دوکاروں کے حادثہ میں موٹرسائیکل سوار دو بھائی موقع پر جاں بحق ہو گئے۔تفصیل کے مطابق غریب محلہ حاصل پور کے رہائشی محمد شعبان اور محمد رضوان اپنے موٹرسائیکل 9844 پر سوار ہو کر دوائی لینے کے لیئے ڈاکٹر کے پاس جارہے تھے کہ حاصل پو ر کے قریب بہاولپور ہائی وے روڈ پر رحمان ٹاؤن کے قریب تیز رفتاری کے باعث دو کاریں آپس میں ٹکرا گئی اس دوران ایک کار موٹرسائیکل سوار دونوں بھائیوں کے اوپر چڑھ گئی جس کے نتیجہ میں دونوں بھائی محمدشعبان اور محمدرضوان شدید زخمی ہو گئے زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر دم توڑ گئے دونوں بھائیوں کی لاشیں گھر پہنچنے پر گھر میں کہرام مچ گیا۔جبکہ ایک بھائی امریکہ سے تعلیم حاصل کر کے گھر آیا ہوا تھا جبکہ کاروں کے حادثہ میں لیاقت علی اور محمد خالد شدید زخمی ہو گئے جن کو طبی امداد کے لیئے سول ہسپتال حاصل پو رمیں داخل کردیا گیا جہاں ایک شدید زخمی لیاقت علی کی حالت نازک بتائی جاتی ہے جبکہ کار ڈرائیور موقع سے فرار پولیس نے مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے پوسٹمارٹم کے بعد لاشیں ورثا کے حوالے کر دی گئیں۔ٹریفک کے مختلف حادثات میں شدید زخمی ہونے والی خاتون سمیت چارفرار دم توڑگئے جبکہ 47زیرعلاج۔ تفصیل کے مطابق پہلا حادثہ راجن پور کی رہائشی25سالہ نذیراں مائی کے ساتھ پیش آیا جو اپنے بھائی کے ہمراہ موٹرسائیکل پرسوار ہوکر جارہی تھی کہ چادر ٹائر میں پھنس جانے کے باعث سر کے بل سڑک پر جاگری اور شدید زخمی ہوگئی، دوسراحادثہ ڈہرکی (سندھ) کے رہائشی16سالہ محمد مبشر کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹرسائیکل پرسوار ہوکر جارہاتھا کہ سامنے سے آنیوالی تیز رفتار ٹریکٹرٹرالی سے جاٹکرایا اور شدید زخمی ہوگیا، تیسرا حادثہ اقبال آباد کے رہائشی 40سالہ مختیار احمد کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹرسائیکل پرسوار ہوکر قومی شاہراہ پرجارہاتھاکہ پیچھے سے آنیوالی تیز رفتار کار نے ٹکر ماردی جس کے نتیجہ میں وہ شدید زخمی ہوگیا، جبکہ چوتھا حادثہ خانپور کے رہائشی30سالہ امیر بخش کے ساتھ پیش آیا جو اپنی موٹر سائیکل پرسوار ہوکر کام کے سلسلہ میں جارہاتھا کہ تیز رفتاری کے باعث سامنے سے آنیوالے پھٹہ رکشہ سے جاٹکرایا اور شدید زخمی ہوگیا، ورثاء نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں تمام زخمی افراد جانبرنہ ہوپائے اور دم توڑگئے جبکہ مختلف حادثات میں زخمی ہونے والے47افراد جن میں بستی امانت علی کارہائشی5سالہ اشعرعلی، آدم صحابہ کی28سالہ ماریہ بی بی، خیر پور کھڈالی کی 20سالہ عارفہ بی بی، راجن پور کی50سالہ شریفاں بی بی، چک111پی غربی کا15سالہ کالا، ہیڈ فرید کا30سالہ سائیں داد، حبیب کالونی کا39سالہ محمدمقصود، چک88کا 15سالہ افضان، 13سالہ محمد ذیشان، 35سالہ محمدطاہر، بستی امانت علی کا35سالہ محمد محبوب، چک84پی کا45سالہ محمداحمد، بلیئجیم چوک کا25سالہ محمد عثمان، غلہ منڈی کا35سالہ جمیل احمد، چک112/1L کا65سالہ محمد منوروغیرہ شامل ہیں۔ ان افراد کو ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔ تھلی چوک کی رہائشی35سالہ حبیبہ بی بی جو کہ روٹر پمپ کا سوئچ لگارہی تھی کہ اچانک کرنٹ لگ گیا جس کے نتیجہ میں وہ جھلس کر شدید زخمی ہوگئی، ورثاء نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود حبیبہ جانبرنہ ہوپائی اور دم توڑگئی۔

حادثہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -