ایکسائز آفس مظفر گڑھ میں ایجنٹ مافیا قابض‘ لوٹ مار تیز

ایکسائز آفس مظفر گڑھ میں ایجنٹ مافیا قابض‘ لوٹ مار تیز

  

خان پور بگاشیر(نمائندہ پاکستان)ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن موٹر رجسٹریشن مظفرگڑھ کا عملہ اور سیکیورٹی گارڈز کا گٹھ جوڑ، ایجنٹ مافیا افسران کی سیٹوں پر رعب جما کرسادہ شہریوں سے گاڑی ٹرانسفر3000ہزار روپے اور نیو رجسٹریشن کے 5000 روپے وصول کر نے میں مصروف عمل، لیکن اس کے (بقیہ نمبر36صفحہ12پر)

باوجود متعلقہ افسران خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں اور وہ مبینہ طور پر سیکیورٹی اہلکار اور ایجنٹ مافیا سادہ لوح شہریوں کے کاغذات پر اعتراض لگا کر لوٹ مار کر رہے ہیں جس کی وجہ سے مظفرگڑھ سمیت دوسرے اضلاع سے آنے والے نیو رجسٹریشن حاصل کرنے والے مالکان دھکے کھانے پر مجبور ہیں،شہریوں شجاعت علی، نوید انجم،نعیم اقبال،غضنفر علی، اصغر علی،شفقت محمود، زرینہ اقبال،منظور فاطمہ وغیرہ کا مزید کہنا ہے کہ مذکورہ دفاتر میں سیکیورٹی کے انتظامات ناقص ہیں اور ان کو ان کی ڈیمانڈ کے مطابق رشوت بھی دینا پڑتی ہے جبکہ نیو رجسٹریشن اور نمبر پلیٹ کے لئے ذلالت سے بچنے کے لئے بھی ان کے ساتھ ہی ڈیل کرنا پڑتی ہے اور اپنے قیمتی وقت کو بچانے کی خاطر منہ مانگے دام دیکرگھنٹوں بھر قطاروں میں کھڑے رہنے کی خواری سے بچا جاسکے،انہوں نے مزید کہا کہ اگر لائنوں میں لگے رہیں تو ہفتوں نہیں بلکہ انہیں مہینوں میں کام ہوتا ہے۔شہریوں نے اس حوالے سے حکام بالا سے اپیل کی ہے کہ شہریوں کو درپیش مسائل کے حل کے لئے ٹھوس اقدامات کئے جائیں تاکہ شہریوں کی ایجنٹ مافیا سے جان چھوٹ سکے تاہم اسسٹنٹ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کا موقف دینے سے انکار شہریوں نے وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن حافظ ممتاز احمد،ڈی جی ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن سے مطالبہ کیا ہے کہ کرپٹ اسسٹنٹ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن آفیسر کے خلاف اعلی افسران کا نام استعمال کر کے لوٹ مار کرنیوالوں کے خلاف کارروائی کی جائے۔

لوٹ مار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -