راولپنڈی جوڈیشل کمپلیکس میں متحارب گروپوں کے مابین تصادم، 7افراد زخمی

  راولپنڈی جوڈیشل کمپلیکس میں متحارب گروپوں کے مابین تصادم، 7افراد زخمی

  

راولپنڈی(آن لائن)جوڈیشل کمپلیکس میں دو متحارب گروپوں میں تصادم کے نتیجہ میں 7افراد زخمی ہو گئے، جنہیں ہسپتال منتقل کر دیاگیا، تصادم سے جوڈیشل کمپلیکس میں بھگدڑ مچ گئی جبکہ سخت سکیورٹی کے باوجود تصادم میں ملوث افراد موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے،اطلاع ملتے ہی ایس پی پوٹھوہار پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے اطلاعات کے مطابق مقامی عدالت میں 2016کے ا قدا م قتل کے مقدمہ نمبر1102کی سماعت کے موقع پر زنگی خان اور بنگی خان گروپ کے افراد عدالت کے باہر پیشی کے انتظا ر میں موجود تھے،اس اثنا میں دونوں گروپوں کے درمیان ہونیوالا جھگڑا تصادم کی صورت اختیار کر گیا،لوہے کے راڈ،آہنی مکے اور اینٹیں لگنے سے محمود الحق کے علاوہ عروج بٹ،سید حسنین شاہ،عاشق حسین، پرویز اختر، محمد حارث،ثاقب جاوید اور شہاب جاویدزخمی ہو گئے، ادھرسی پی او نے جوڈ یشل کمپلیکس میں متحارب گروپوں کے تصادم نوٹس لیتے ہوئے کمپلیکس کی سکیورٹی فول پروف بنانے، تصادم کی انکوائری کا حکم دیتے ہوئے واضح کیا کہ سکیورٹی میں غفلت قابل برداشت نہیں اگر کوئی پولیس اہلکار غفلت کا مرتکب پایا گیا تو اس کیخلاف بھی کاروائی ہو گی، ڈسٹرکٹ بار کے جنرل سیکریٹری کے مطابق پولیس کے سخت سکیورٹی انتظامات کی وجہ سے کوئی فریق بھی جوڈیشل کمپلیکس میں اسلحہ نہیں لاسکا،انہوں نے مطالبہ کیا کہ جس نے بھی احاطہ کچہری میں قانون شکنی کی اس کیخلاف دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا جائے،ایس پی پوٹھوہار سید علی نے بار کے جنرل سیکرٹری کو یقین دلایا کہ حکام بالا واضح ہدایات ہیں احاطہ کچہری میں قانون شکنی کرنے پر دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمات درج ہوں گے۔

گروپ تصادم

مزید :

صفحہ آخر -