قندیل بلوچ قتل کیس، مقتولہ کا بھائی عارف انٹر پول کے ذریعے گرفتار

قندیل بلوچ قتل کیس، مقتولہ کا بھائی عارف انٹر پول کے ذریعے گرفتار

  

ملتان(این این آئی)معروف ماڈل قندیل بلوچ قتل کیس میں مفرور اور اشتہاری ملزم عارف کو انٹر پول کے ذریعے گرفتار کر لیا گیاہے۔پولیس ذرائع کے مطابق مقتولہ کے ملزم بھائی عارف کو ملتان منتقل کر دیا گیاہے۔ ملزم عارف کو پولیس تھانہ مظفر آباد کے حوالے کر دیا گیاہے۔واضح رہے کہ عدالت نے قندیل بلوچ قتل کیس کے کردار  سعودی عرب میں مقیم ملزم عارف کو اشتہاری قرار دیا تھا۔ماڈل قندیل بلوچ قتل کیس میں بھی ملزم عارف کے جرم کا فیصلہ ہونا باقی ہے۔ ملزم عارف  کے حوالے سے علیحدہ چالان عدالت میں پیش کیا جائے گا۔واضح رہے کہ ملتان کی مقامی عدالت نے27ستمبر کو  قندیل بلوچ قتل کیس میں مرکزی ملزم وسیم کوعمر قید کی سزا سنا دی جبکہ مفتی عبدالقوی کو باعزت بری کرنے کا حکم دے دیا۔عدالت نے فریقین کے دلائل اور گواہوں کے بیانات اور جرح مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کیا تھا جو27ستمبرکو سنایا گیا۔واضح رہے کہ فیس بک ویڈیوز سے شہرت حاصل کرنے والی ماڈل قندیل بلوچ کو ان کے بھائی نے 15 جولائی 2016 کو مبینہ طور پر غیرت کے نام پر قتل کردیا تھا۔واقعے کے بعد پولیس نے ماڈل کے بھائی وسیم کو مرکزی ملزم قرار دے کر گرفتار کیا تھا جس نے بعد میں جرم کا اعتراف بھی کیا تھا۔کیس کی آخری سماعت میں ملزمان وسیم،مفتی قوی، حقنواز، اسلم شاہین اور عبدالباسط بھی پیش ہوئے۔ قندیل بلوچ کی والدہ بھی عدالت میں موجود تھیں۔یاد رہے کہ اس اہم کیس کا فیصلہ 3 سال 2 ماہ اور 11دن کے طویل عدالتی کارروائی کے بعد سنایا گیا۔

قندیل قتل کیس

مزید :

صفحہ آخر -