عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی ریاستی دہشتگردی کا ادراک کرے:صدر مملکت

  عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی ریاستی دہشتگردی کا ادراک کرے:صدر ...

  

اسلام آباد (آئی این پی) صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے عالمی برادری پر زوردیا ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں اور ملک میں اقلیتوں کے خلاف بھارت کی ریاستی دہشت گردی کا ادراک کرے۔ریڈیوپاکستان کو دئیے گئے خصوصی انٹرویو میں انہوں نے کہاکہ دنیا مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر خاموش تماشائی نہیں رہ سکتی۔صدر نے کہاکہ مقبوضہ کشمیرمیں بھارت کے غیرقانونی اقدامات کے خلاف سخت غم وغصہ پایاجاتا ہے اور بھارتی حکام کوفیو اٹھائے جانے کے بعد ردعمل دیکھیں گے۔صدر عارف علوی نے کہاکہ کرفیو اور مواصلاتی بندش ختم کی جائے اور صحافیوں کو مقبوضہ وادی جانے کی اجازت دی جانی چاہیے۔ انہوں نے کشمیری عوام سے بھی کہاکہ وہ بھارتی مظالم کی تصاویر کی تشہیرکریں۔کشمیری عوام کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے صدر نے کہاکہ کشمیریوں نے حق خودارادیت کے حصول کی منصفانہ جدوجہد میں ایک لاکھ جانیں قربان کی ہیں۔صدر نے کہاکہ پاکستان اس منصفانہ جدوجہد میں ہمیشہ کشمیری بھائیوں کے شانہ بشانہ رہے گا انہوں نے کہاکہ پاکستان نے ہمیشہ ہرفورم پر کشمیر کامسئلہ اٹھایا ہے۔کشمیری عوام کی حالت زار اجاگر کرنے کے حوالے سے پاکستان کی کوششوں سے متعلق سوال پرصدر نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان نے خود کو مظلوم عوام کا حقیقی سفیر ثابت کیا ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان کی طرف سے اپنے کشمیری بھائیوں کیلئے اٹھائی گئی بھرپور آواز اب سنی جارہی ہے اور اس کے عالمی برادری پر اثرات مرتب ہوں گے۔انہوں نے کہاکہ ترکی کے صدر رجب طیب اردوان اور ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد نے بھی مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر تشویش ظاہر کی ہے۔انہوں نے کشمیر کے بارے میں پاکستان کے موقف کی حمایت کرنے پر چین، ترکی، ملائیشیا اور دوسرے ملکوں کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے کہاکہ کشمیر کے بارے میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی گیارہ قراردادیں موجود ہیں اور اس سلگتے تنازعے کاحل صرف کشمیری عوام کی امنگوں پر ہی منحصر ہے۔صدر نے کہاکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بارہا ثالثی کی پیشکش کی تاہم بھارت اس کیلئے تیار نہیں ہے انہوں نے کہاکہ اگر بھارت ثالثی کیلئے تیار نہیں ہوتا تو اسے پاکستان اور کشمیریوں کے ساتھ مل کر یہ مسئلہ حل کرناچاہیے۔بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ نارواسلوک کا ذکرکرتے ہوئے صدر نے کہاکہ دہلی کی گلیوں میں تین ہزار سکھوں کا خون بہایاگیا، گجرات میں مسلمانوں کا بھی اسی طرح کا قتل عام کیاگیا جس کے بعد مودی کو عالمی ویزہ نہیں دیاجارہا تھا۔

صدر مملکت

مزید :

صفحہ آخر -