وزیراعظم کے پاس کشمیر اور ملکی مسائل کا حل صرف ٹویٹ اور تقریر،سراج الحق

 وزیراعظم کے پاس کشمیر اور ملکی مسائل کا حل صرف ٹویٹ اور تقریر،سراج الحق

  

لاہور (آن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ پانامہ لیکس میں نامزد 90افراد کو ایمنسٹی سکیم میں کلیئر کرنا احتساب کیساتھ مذاق ہے۔جماعت اسلامی سب کا بے لاگ احتساب چاہتی ہے۔ کرپشن فری پاکستان کا ہمارا نعرہ اب ہر پاکستانی کی آواز بن چکاہے۔ لگتاہے کہ اقوام متحدہ میں ایک اچھی تقریر کرنے کے بعد وزیراعظم کشمیر کو فراموش کر چکے ہیں۔ حکومت اب تک کشمیر پر قومی امنگوں کے مطابق فیصلہ نہیں کرسکی۔ وزیراعظم کے پاس کشمیر اور ملکی مسائل کا حل صرف ٹویٹ اور تقریر ہے۔ ا سٹیٹس کو کی محافظ قوتوں نے ملک و قوم کے مسائل میں اضافہ کیاہے۔ حکمران عوام کو ریلیف دینے اور ملک میں استحکام لانے کی بجائے بوجھ ثابت ہوئے ہیں۔ سابقہ حکومتوں کی کرپشن اور لوٹ مار کا حساب کرنے اور لوٹی دولت واپس لانے کے نعرے لگانے والے ایک سال میں کچھ نہیں کر سکے۔ معاشی اور اقتصادی زبوں حالی نے مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافہ کیاہے جس کی وجہ سے عوام کے اندر سخت مایوسی اور بے چینی پائی جارہی ہے۔ قرضوں میں کمی کا دعویٰ کرنے والوں نے قوم پر قرضوں کا کوہ ہمالیہ لاد دیا ہے۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں جماعت اسلامی کی مرکزی مجلس عاملہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ سراج الحق نے کہاکہ وزیراعظم نے پاکستان کو مدینہ کی طرز پر اسلامی ریاست بنانے، سب کے بے لاگ احتساب، کشکول اٹھانے پر موت کو ترجیح دینے، ایک کروڑ نوکریوں اور پچاس لاکھ بے گھر لوگوں کو گھر دینے کے بلند و بانگ دعوے کیے تھے۔ اب یہ تمام دعوے ہوا میں بکھر اور فضاؤں میں گم ہو چکے ہیں۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -