اسلام انسانی حقوق کا سب سے بڑا علمبردار ہے:مشتاق احمد غنی

اسلام انسانی حقوق کا سب سے بڑا علمبردار ہے:مشتاق احمد غنی

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا اسمبلی کے سپیکر مشتاق احمد غنی نے کہا ہے کہ اسلام انسانی حقوق کا سب سے بڑا علمبردار ہے بھارت کا سیکولر چہرہ بے نقاب ہو چکا ہے، کشمیریوں پر ڈھائے جائے والے مظالم کسی سے چھپے نہیں مگر انسانی حقوق کا راگ الاپنے والے ممالک ان مظالم پر خاموش تماشائی ہیں۔ پاکستان انسانی حقوق کے حوالے سے دوسرے ہمسایہ ممالک سے زیادہ بہتر ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہو ں نے کراچی میں یو این ڈی پی کے زیر اہتمام انٹرنیشنل ہیومن رائٹس سسٹم پر منعقدہ ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کیا، ورکشاپ میں صوبائی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئی، مشیر تعلیم ضیاء اللہ بنگش، ڈپٹی سپیکر محمود جان، سپیشل اسسٹنٹ ٹو سی ایم کامران بنگش، بلال خٹک سمیت اراکین اسمبلی کی بڑی تعداد موجود تھی۔ سپیکر مشتاق غنی نے کہا کہ ہیومن رائٹس ورکشاپ کی بڑی اہمیت ہے ہمارے ممبران اسمبلی کو بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے مذہب نے انسانی حقوق کا درس دیا ہے۔ اسلام میں کسی کے ساتھ زیادتی کا تصور نہیں بلکہ تمام انسانوں کے یکساں حقوق ہیں۔ بھارت جو سیکولر کہلاتا ہے کشمیر اور انسانی حقوق کی پامالی کی وجہ سے بھارت کا سیکولر چہرہ بے نقاب ہو چکا ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئی نے ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں تمام مکتبہ فکر کے حقوق محفوظ ہیں اور یہی وجہ ہے کہ پاکستان میں تمام اقلیت خوش اور خوشحال ہیں۔ انہو ں نے کہا کہ ہمارا مذہب اسلام ہر ایک کو یکساں حقوق دینے کا درس دیتا ہے۔ انہو ں نے کہا کہ میں شہریوں کو یکساں ترقی کے مواقع دستیاب ہیں۔ پاکستان انسانی حقوق کے حوالے سے سب ممالک میں بہتر ہے تاہم بدقسمتی سے اس خطے کو ایک سازش کے ذریعے دہشت گردی کا شکار بنایا گیا تاہم ہماری افواج اور سیکورٹی اداروں نے پاکستان میں دہشت گردی کو شکست دی۔ آج پاکستان پرامن ملک بن چکا ہے، سرمایہ کاری یہاں سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں، ایٹمی ملک ہونے کی وجہ سے آنے والا وقت پاکستان کے لئے بہت اہم ثابت ہو گا 

مزید :

صفحہ اول -