شیل کاپاکستان میں سات دہائیوں پر مشتمل سفرکا جشن   

      شیل کاپاکستان میں سات دہائیوں پر مشتمل سفرکا جشن   

  

کراچی(پ ر)شیل کے زیر اہتمام پاکستان میں اس کے سات دہائیوں پر مشتمل سفر کا جشن منایا گیا۔ اس موقع پر”پاورنگ پروگریس ان پاکستان  (Powering Progress in Pakistan)“ کے عنوان سے ایک یادگاری کتاب کا اجراء بھی ہوا جس میں پاکستان میں توانائی کے شعبے کی ترقی کے لیے ادارے کے اہم کردار اور تعاون کا اُجاگر کیا گیا ہے۔ وفاقی وزیر برائے ساحلی اُمور، علی زیدی نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے تقریب کو عزت بخشی۔ تقریب میں سرکاری افسران، کاروباری رہنماؤں، سفارت کاروں، ماہرین تعلیم اور ادارے کے ملازمین نے بڑے پیمانے پر شرکت کی۔شیل پاکستان کی رائے میں پاکستان دنیا کی چوبیسویں بڑی معیشت اور آبادی کے اعتبار سے چھٹا بڑا ملک ہے جس کی زرعی بنیا د بہت وسیع ہے، صنعتی شعبہ تیزی سے ترقی کررہا ہے اور اس میں ترقی کرنے اور توانائی کی جانب منتقلی کی زبردست گنجائش موجود ہے۔علاقے میں  120برسوں کے ورثے کیساتھ، زمین، فضا اور سمندرکے راستے شیل نے ترقی کے حوالے سے پاکستانی ترجیحات میں مدد فراہم کی ہے۔منگلا ڈیم اور کوٹری بیراج جیسے بڑے پروجیکٹس کی تعمیرکے لیے پیٹرولیم پروڈکٹس کی فراہمی سے لے کر ملک کے روڈ انفرااسٹرکچر کی وسعت، پی آئی اے کی ابتدائی پروازوں کو پاور کی فراہمی ہویا پاکستان میں جدت پسند انٹریپرینیورز کی آئندہ نسل کی اعانت،شیل پاکستان قومی ترقی میں ہمیشہ حصہ دار رہا ہے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے ساحلی امور، علی زیدی نے کہا:”ان تمام سات دہائیوں کے دوران، شیل پاکستان ہمارے وطن کی ترقی میں مسلسل اور مضبوط حصہ دار رہا ہے۔

 ہماری قوم کو وسائل سے بھرپور ایسے عالمی ادارے پر فخر ہے جو بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کرتا ہے تاکہ توانائی کے لیے پاکستان کی ضروریات پوری کی جا سکیں۔“شیل پاکستان کے چیف ایگزیکٹو اور منیجنگ ڈائریکٹر، ہارون رشید نے کہا:”توانا اور نوجوان آبادی، قدرتی وسائل کی فراوانی، اقتصادی تعاون اور توانائی کے پائیدار وسائل کو ترقی دینے کے مشن کے ساتھ، پاکستان اپنی ترقی کے راستے کو مستحکم بنارہا ہے۔شیل نے پاکستان کی ترقی اور پیش رفت کو تیز کرنے میں ہمیشہ حصہ لیا ہے اور آج بھی حصہ دار ہے۔ جیسا کہ پاکستان توانائی کے پائیدار وسائل کو ترقی دینے کے لیے کام کر رہا ہے، شیل پاکستان کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ ہم تبدیلی کو آگے بڑھانے میں حکومت پاکستان کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔“

مزید :

کامرس -