28ممالک میں پاکستانیوں کے کتنے پیسے پڑے ہوئے ہیں؟ جواب آپ کے اندازوں سے کہیں زیادہ

28ممالک میں پاکستانیوں کے کتنے پیسے پڑے ہوئے ہیں؟ جواب آپ کے اندازوں سے کہیں ...
28ممالک میں پاکستانیوں کے کتنے پیسے پڑے ہوئے ہیں؟ جواب آپ کے اندازوں سے کہیں زیادہ

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر برائے معاشی امور حماد اظہر نے کہا کہ28 ممالک سے موصول ڈیٹا کے مطابق پاکستانیوں کے11ارب ڈالر بیرون ملک موجود ہیں جن میں سے 50فیصد رقم کو ٹیکس یا ایمنسٹی کے ذریعے ظاہر کیا گیا ہے،سابق حکومت نے سیاست بچانے کے لیے معیشت تباہ کردی۔

لاہور میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے معاشی امور حماد اظہر  نے کہا کہ  2013 میں قومی اسمبلی میں کھڑے ہو کر اسحق ڈار نے کہا تھا کہ 2 سو ارب ڈالر ملک کے باہر موجود ہیں، ہم ان اعداد و شمار سے متعلق معلومات حاصل کرنے کی کوشش کررہے ہیں،ہمیں او ای سی ڈی کی جانب سے صرف 28 ممالک کا ڈیٹا ملا ہے، اقامہ کی تفصیلات بھی نہیں ملیں۔پنجاب میں صحت انصاف کارڈ متعارف کروانے سے متعلق حماد اظہر نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے پچھلے ادوار میں خیبرپختونخوا میں صحت انصاف کارڈ کا کامیاب تجربہ کیا تھا،لاہور سے صحت انصاف کارڈ کا آغاز کررہے ہیں جس کے ذریعے پنجاب میں لاکھوں لوگوں کو صحت انصاف کارڈ جاری کیے جائیں گے اور اس کی تقسیم میں کسی قسم کی سیاسی مداخلت نہیں ہوگی،غریبوں کی فلاح و بہبود کے پروگرام کو ایک سو ارب سے بڑھا کر ایک سو 90 ارب تک مختص کیا گیا ہے جس میں بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے تحت دیے جانے والے وظیفے کو دگنا کیا گیا ہے جبکہ راشن کارڈ اور صحت انصاف کارڈ کا اجرا بھی کیا جائے گا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ نچلے طبقے کو سہولیات دینا حکومت کی ذمہ داری ہے خاص طور پر ایسے وقت میں جب ہمیں معیشت کے لیے سخت فیصلے کرنے پڑے، جس کے ثمرات نظر آنے لگے ہیں،ماضی کی حکومتوں سے ملنے والے معاشی بحران کے بعد استحکام آگیا ہے، کرنٹ اکانٹ خسارے میں 55 فیصد کمی آئی، زرِ مبادلہ کے ذخائر مستحکم ہیں جبکہ ہم نے ریکارڈ قرضہ واپس کیا، ہمیں بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کرنا پڑا، سابق حکومت نے سیاست بچانے کے لیے معیشت تباہ کردی،موجودہ حکومت میں روپے کی قدر میں بہتری آئی ہے ، پی ٹی آئی کی حکومت کے دور میں معیشت میں بہتری کی رفتار سب سے تیز ہوگی۔ایک سوال کے جواب میں حماد اظہر نے کہا کہ تاجر برادری کی آرمی چیف سے ملاقات اچھی رہی، تاجر برادری کو معیشت کی صورتحال سے متعلق آگاہ کیا گیا اور میں سمجھتا ہوں کہ تمام لوگ بہت خوش واپس گئے اور انہیں اعتراف کرنا پڑے گا کہ واقعی اس حکومت نے مشکل فیصلے کیے، تمام ادارے اس وقت ایک پیج پر ہیں، قومی مقاصد کے لیے یکساں ہیں اور 5 سال میں مل کر اس ملک کو عظیم بنائیں گے۔حماد اظہر نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ فضل الرحمن کے ساتھ کوئی بھی کھڑا ہونے کو تیار نہیں، مدراس کے بچوں کو سیاسی ہتھکنڈوں کے لیے استعمال نہیں کرنا چاہیے، اقوام متحدہ میں عمران خان کی تقریر میں ہر چیز سامنے آگئی ہے اور مذہبی طبقہ بھی وزیراعظم کے ساتھ ہے۔

مزید :

قومی -