پاک چین اقتصادی راہداری کےتمام منصوبےفعال،دونوں ممالک کےتعلقات نئی بلندیوں تک لے جانا چاہتے ہیں: خسرو بختیار

پاک چین اقتصادی راہداری کےتمام منصوبےفعال،دونوں ممالک کےتعلقات نئی بلندیوں ...
پاک چین اقتصادی راہداری کےتمام منصوبےفعال،دونوں ممالک کےتعلقات نئی بلندیوں تک لے جانا چاہتے ہیں: خسرو بختیار

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار نے کہا ہے کہ پاک چین اقتصادی راہداری کے تمام منصوبے خصوصا شعبہ توانائی کے منصوبے فعال ہیں،سی پیک منصوبوں سے متعلق منفی موقف کی تردید کرتا ہوں،دونوں ممالک کے مابین تعلقات اہم ہیں جسے ہم نئی بلندیوں تک لے جانا چاہتے ہیں،عالمی فورم پر مقبوضہ کشمیر کے معاملے میں پاکستان کی  حمایت پر چین کے مشکور ہیں ۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئےمخدوم خسرو بختیار نےکہاکہ ملک میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ اورتجارتی خلاکوکم کرنےکےلیےمعاشی ترقی بہت ضروری ہے،پاک چین تعلقات اہم ہیں جسے ہم نئی بلندیوں تک لے جانا چاہتے ہیں،،چین کے ساتھ اس مرتبہ جو بات چیت ہوگی اور  اب جو عمارت استوار کریں گے وہ بہت پائیدار ہوگی۔وفاقی وزیر منصوبہ بندی نے کہا کہ ملک میں کرنٹ اکانٹ خسارہ اور تجارتی خلا کو کم کرنے کے لیے معاشی ترقی بہت ضروری ہے۔انہوں نے بتایا کہ گوادر میں 300 میگا واٹ بجلی کا مسئلہ حل ہوگیا ہے۔مخدوم خسرو بختیار نے بتایا کہ بلوچستان حکومت کے ساتھ مل کر گوادر ماسٹر پلان اور کوسٹل ہائی وے منصوبے کو حتمی شکل دے دی گئی،اقتصادی ترقی میں سستی بجلی ضروری ہے اس لیے چین کے دورے میں متعدد ایسے منصوبے زیر بحث آئیں گے۔انہوں نے بتایا کہ دیگر منصوبوں کے علاوہ بونجی ڈیم بھی شامل ہے جس میں 7 ہزار میگا واٹ بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت ہے، مذکورہ منصوبے سے سستی بجلی ملے گی جس سے ملکی معشیت پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ان کا کہنا تھا کہ ملک میں سٹیل کا شارٹ فال 9 ملین ٹن ہے اور اس کی ضرورت کو پورا کرنے کے لیے چین کے ساتھ بات ہوگی، کراچی میں سٹیل ملز کی فعالیت سے 3 ملین ٹن کی ضرورت پوری کی جا سکتی ہے۔واضح رہے کہ رواں برس جنوری میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت نے مسلم لیگ (ن) کے دور میں شروع کیے جانے والے سی پیک کے متعدد منصوبے ملتوی کردیے تھے اور رواں ماہ کے آخر تک سرکاری ترقیاتی پروگرام (پی ایس ڈی پی) کے تحت چلنے والے مزید منصوبوں پر کام روک دیے جانے کا امکان ظاہر کیا جارہا تھا۔

یادرہے کہ وزیراعظم عمران خان  کل  چین کے دورے پر روانہ ہورہےہیں جس میں وہ چینی قیادت کےساتھ دوطرفہ اقتصادی اور تجارتی تعلقات اور چین پاکستان اقتصادی راہداری کے منصوبوں پر بات چیت کریں گے،اس موقع پر پاکستانی وفد چین کو خراج تحسین پیش کرے گا کہ انہوں نے عالمی فورم پر مقبوضہ کشمیر کے معاملے میں حمایت کی۔

مزید :

قومی -