مالی کرپشن‘ملزم رفاقت علی کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع 

 مالی کرپشن‘ملزم رفاقت علی کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع 

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے ریونیو ڈیپارٹمنٹ لاہور میں مالی کرپشن میں ملوث ملزم رفاقت علی کے جوڈیشل ریمانڈ میں 20 اکتوبر تک توسیع کردی،نیب پراسیکیوٹر عاصم ممتاز عدالت میں پیش ہوئے،احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نے کیس پر سماعت کی،نیب کے پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزم رفاقت علی نے سرکاری وپرائیویٹ زمین من پسند افراد کے نام منتقل کی، نیب کے تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ پٹواری سمیت دیگر ملوث ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری ہوچکے ہیں، نیب نے ریونیو ڈیپارٹمنٹ لاہور میں مبینہ مالی کرپشن پر ملزم کو گرفتار کیا،نیب کا موقف ہے کہ لینڈ ریکارڈ میں مبینہ ردوبدل کرتے ہوئے کروڑوں روپے بٹورنے کے الزام میں ملزم رفاقت علی کو گرفتار کیا گیا، ملزم رفاقت علی محکمہ ریونیو کے اہلکار جمیل احمد کا بیٹا جبکہ کروڑوں روپے کی کرپشن میں ملوث پایا گیا، ملزم رفاقت علی نے ریونیو حکام کی مبینہ ملی بھگت سے موضع سادھوکی اور ماڈل ٹاؤن کے علاقہ میں اربوں روپے مالیت کی سینکڑوں کنال زمین شریک ملزمان کے نام منتقل کروائی، ملزم رفاقت علی نے 2002 ء سے 2008 ء کے دوران 850 کنال سے زائد زمین من پسند افراد کو منتقل کی، ملزمان نے آپس کی ملی بھگت سے 83 کنال زمین غیرقانونی طور پر ڈی ایچ اے رہبر کو بھی فروخت کی، ریونیو حکام کی ملی بھگت سے پنجاب کوآپریٹو بینک کی 135 کنال زمین بھی ملزمان نے ملی بھگت سے فروخت کی، غیرقانونی طور پر حاصل رقوم سے ملزم رفاقت علی نے اپنے اور اہلخانہ کے نام کروڑوں روپے کی جائیدادیں بنائیں جنکے شواہد حاصل کر لئے گئے ہیں،دوران تحقیقات ملزم سے مالی غبن اور شریک ملزمان کے حوالے سے اہم انکشافات کی امید ہے۔

مزید :

علاقائی -