غداری کیس، کیپٹن (ر) صفدر کی 10 اکتوبر تک حفاظتی ضمانت منظور

غداری کیس، کیپٹن (ر) صفدر کی 10 اکتوبر تک حفاظتی ضمانت منظور

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس اسجد جاوید گھرال نے سابق وزیراعظم نواز شریف کے داماد کیپٹن (ر)محمدصفدر کی غداری کیس میں 10اکتوبر تک حفاظتی ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں مستقل ضمانت کے لئے متعلقہ عدالت سے رجوع کرنے کی ہدایت کردی،درخواست گزارکیپٹن ریٹائرڈ محمدصفدر کی طرف سے درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ ان کے خلاف مقدمہ سیاسی انتقامی کارروائی ہے  شامل تفتیش ہونا چاہتا ہوں،عدالت سے استدعا ہے کہ حفاظتی ضمانت منظور کی جائے،کیپٹن ریٹائرڈ محمدصفدر کے خلاف گوجرانوالہ پولیس نے لوگوں کو ریاست کے خلاف اکسانے کے الزام میں غداری کا مقدمہ درج کر رکھا ہے عدالت عالیہ کے رجسٹرار آفس نے کیپٹن (ر) محمد صفدر کی درخواست پر اعتراض عائد کیا تھا کہ اس کے ساتھ ایف آئی آر کی مصدقہ نقل لف نہیں کی گئی ہے،فاضل جج نے اعتراض کیس کے طور پر اس درخواست کی سماعت کرتے ہوئے درخواست گزار کے وکیل سید فرہاد علی شاہ سے استفسار کیا کہ کیا مقدمہ کی مصدقہ نقل کہاں ہے؟جس پر وکیل نے کہا کہ مقدمہ کی مصدقہ نقل نہیں دے رہے جس کی وجہ سے ایف آئی آر کی کمپیوٹرائزڈ نقل لگائی ہے،فاضل جج نے استفسار کیا آپ کو کتنے روز چاہئیں؟جس پر سید فرہاد علی شاہ نے کہا کہ ہمیں ہفتے سے زیادہ تائم دے دیں،گوجرانوالہ میں جلسہ سے پہلے پولیس درخواست گزار کاگرفتارکرنا چاہتی ہے،فاضل جج نے رجسٹرار آفس کا اعتراض مسترد کرتے ہوئے کیپٹن (ر) محمد صفدر کی حفاظتی ضمانت منظورکرلی۔

حفاظتی ضمانت

مزید :

صفحہ آخر -