ڈی جی ایکسائز صالحہ سعید کی  تعیناتی لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج 

 ڈی جی ایکسائز صالحہ سعید کی  تعیناتی لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج 

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ میں ڈی جی ایکسائز صالحہ سعید کی تعیناتی کوچیلنج کردیا گیاہے، درخواست میں حکومت پنجاب سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا ہے، درخواست گزار کے وکیل ندیم سرور کا موقف ہے کہ30 ستمبر کو گریڈ 20 ء کے مسعود الحق کو ڈی جی کے عہدہ سے ہٹا کر ان کی جگہ گریڈ 19 کی افسر صالحہ سعید کو ڈائریکٹر جنرل ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکوٹکس کنٹرول پنجاب تعینات کیاگیاہے، پنجاب گورنمنٹ سول سرونٹ ایکٹ کے تحت جونیئر افسر کو بڑے عہدے پر تعینات نہیں کیا جاسکتا، سپریم کورٹ نے بھی جونیئر افسر کی سینئر عہدہ پر تعیناتی غیر قانونی قرار دی جبکہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن سروس رولز کے مطابق ڈائریکٹر جنرل کا عہدہ گریڈ 20 کا ہے اس پرگریڈ 19 کا افسر تعینات نہیں کیا جاسکتا، ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکوٹکس کنٹرول ڈیپارٹمنٹ میں 9 ڈائریکٹر پہلے ہی گریڈ 19 میں ریگولر کام کر رہے ہیں، اس صورت حال میں 9 افسر اپنی ہم مرتبہ صالحہ سعید کے ماتحت کیسے کام کر سکتے ہیں، عدالت سے استدعاہے کہ ڈی جی ایکسائز صالحہ سعید کی تعیناتی کو کالعدم قرار دیاجائے۔

چیلنج 

مزید :

صفحہ آخر -