اے پی این ایس، سی پی این ای کی رکن مطبوعات کو اشتہار دینے کی پالیسی درست: خوشنود علی خان 

  اے پی این ایس، سی پی این ای کی رکن مطبوعات کو اشتہار دینے کی پالیسی درست: ...

  

 فیصل آباد(پ ر) پنجاب حکومت کی پالیسی کا یہ حصہ کہ اشتہارات اے پی این ایس اور سی پی این ای کی رکن مطبوعات کو ہی ملے گا بہت ہی خوش آئند ہے، اب حکومت پنجاب انفارمیشن کے جو قوانین بنا رہی ہے ان میں اے پی این ایس کو اعتماد میں لیا جا رہا ہے۔ چنددن پہلے سیکرٹری انفارمیشن پنجاب اور ڈی جی پی آر اسلم ڈوگر نے ہمیں اعتماد میں لیا ہے اور اگر کسی بات پر ہم متفق نہیں ہوں گے تو ہم ان سے مذاکرات کرینگے، یہ باتیں اے پی این ایس پنجاب کمیٹی کے سربراہ خوشنود علی خان نے فیصل آباد میں پنجاب کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔ اس اجلاس میں سرمد علی  نے بطور خاص شرکت کی تھی۔ تین گھنٹے جاری رہنے والے اس اجلاس میں سید منیر جیلانی (جوائنٹ سیکرٹری اے پی این ایس)، ہمایوں گلزار چیئرمین ریجنل کمیٹی، جاوید مہر شمسی(چیئرمین سندھ کمیٹی)، عتیق الرحمٰن، ہمایوں طارق، سردار عابد علیم، محمد اویس خوشنود، عمر بٹ، میاں سعید الشریف، شاہد محمود علی، ارشاد نامی یاور خلیق، امجد اقبال اور احمد علی بلوچ نے شرکت کی۔اجلاس میں بعض اراکین نے وینڈر نمبر کی وجہ سے مشکلات کا ذکر کیا اور کہا کہ اس کی وجہ سے گزشتہ چھ ماہ سے اخبارات کو ادائیگیاں رکی ہوئی ہیں جس پر خوشنود علی خان نے کہا کہ میری اس حوالے سے محترمہ شاہیرا شاہد سے کئی بار بات ہو چکی ہے۔ سید سرمد علی (سیکرٹری جنرل اے پی این ایس) بھی ان سے رابطے میں ہیں اور پی آئی او صاحبہ بھی چاہتی ہیں کہ جتنا جلد ممکن ہو یہ مشکلات دور ہوں اور اخبارات کو ادائیگی ہو۔ لیکن حقیقت یہ ہے کہ بعض اخبارات نے ابھی تک وینڈر نمبر ہی حاصل نہیں کئے اراکین نے اجلاس میں شکایت کی کہ پنجاب میں 30لاکھ تک کے کاموں کے ٹینڈر نہ ہونے سے جہاں اخبارات خصوصاً علاقائی اخبارات کو بہت نقصان ہو گا بلکہ ٹھیکوں کے کام میں شفافیت نہیں رہے گی۔ پنجاب کمیٹی کے چیئرمین نے اراکین کو بتایا کہ ہم پیپرا کو اس بات سے آگاہ کر رہے ہیں کہ ٹھیکوں میں شفافیت برقرار نہیں رہے گی۔ ہم اس خط کی کاپی وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کو بھی بھجوا رہے ہیں ہمیں یقین ہے، ہمارا مسئلہ حل ہو جائے گا، اجلاس میں تمام اراکین نے پنجاب کے حوالے سے چیئرمین کو مسائل سے آگاہ کیا اور اجلاس میں یہ بات بھی زیر بحث آئی کہ بعض لوگوں کو اشتہارات  ان کے حصے اور حجم سے زیادہ اشتہارات مل رہے ہیں جس پر خوشنود علی خان نے کہا کہ اگلے ہفتے ہم سیکرٹری انفارمیشن اور ڈی جی پی آر سے ملیں گے اور اشتہارات کی منصفانہ تقسیم پر ان کی توجہ دلائیں، چیئرمین پنجاب کمیٹی نے ممبران کو یقین دلایا کہ پنجاب حکومت کو ہم اشتہارات کی منصفانہ تقسیم پر مذاکرات کے ذریعے رضا مند کر لیں گے۔

خوشنود علیخان

مزید :

صفحہ آخر -