شادی ہالز، ریسٹورنٹس کیلئے نئے کورونا ایس او پیز جاری کرنے کا فیصلہ 

    شادی ہالز، ریسٹورنٹس کیلئے نئے کورونا ایس او پیز جاری کرنے کا فیصلہ 

  

 اسلام آباد،کراچی،بٹگرام (سٹاف رپورٹرز، نیوز ایجنسیاں) کورونا وائرس سے مزید4 افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے بعد اموات کی تعداد 6 ہزار 517 ہوگئی۔ جبکہ گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں مزید 644نئے مریض رپورٹ ہونے کے بعدملک میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 3 لاکھ 15 ہزار 260 ہوگئی۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق اب تک پنجاب میں 99 ہزار 941، سندھ میں ایک لاکھ 38 ہزار 341، خیبر پختونخوا میں 38 ہزار 76، بلوچستان میں 15 ہزار 399، گلگت بلتستان میں 3 ہزار 852، اسلام آباد میں 16 ہزار 789 جبکہ آزاد کشمیر میں 2 ہزار 862 کیسز رپورٹ ہوئے۔ملک بھر میں اب تک 36 لاکھ 78 ہزار 534 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 29 ہزار 565 نئے ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 2 لاکھ 99 ہزار 836 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 515 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔ پنجاب میں 2 ہزار 240، سندھ میں 2 ہزار 521، خیبر پختونخوا میں ایک ہزار 262، اسلام آباد میں 183، بلوچستان میں 146، گلگت بلتستان میں 89 اور ا?زاد کشمیر میں 76 مریض جاں بحق ہو چکے ہیں۔دوسری جانب حکومت نے کورونا وائرس کے تناظر میں شادی ہالز اور ریسٹورنٹس سے متعلق نئے ایس او پیز جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے،اس ضمن میں وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا پہلے مرحلے میں کل بروز بدھ سے شادی ہالز سے متعلق نئے ایس او پیز جاری ہونگے، شادی ہالز میں شہریوں تعدد اور اوقت کار مقرر کئے جائیں گے۔ دوسرے مرحلے میں ریسٹورنٹس سے متعلق ایس و پیز جاری کئے جائیں گے، ریسٹورنٹس میں بیٹھنے کی گنجائش، ماسک کا ضروری استعمال اور اوقات کار پر پابندی لازم ہو گی۔ادھر این سی او سی میں کورونا وائرس کی وبا کے حوالے سے روزانہ کی صورتحال پر فورم کو آگاہ کیا گیا کہ ماسک پہننے،سماجی فاصلوں پر عملدرآمد نہ ہونے کی وجہ اس وائرس کے پھیلاؤ میں مددگار ثابت ہو سکتا ہے،وفاقی وزیر ے منصوبہ بندی، ترقی، اصلاحات و خصوصی اقدامات اسد عمر نے کہا کہ وائرس کے پھیلاؤ اور روک تھام کے اقدامات کی نگرانی ضروری ہے۔ ماسک پہننا کورونا وائرس کی وبا کے پھیلاؤ کو کنٹرول کرنے میں مدد دیتا ہے۔ ایس او پیز پر عملدرآمد سے سردیوں میں وائرس کی دوسری لہر سے بچا جاسکتا ہے۔ شادی ہالز اور ریستوران بیماریوں کے پھیلاؤ کے بڑے مراکز بن رہے ہیں۔این سی او سی نے صحت کے رہنما خطوط، پروٹوکول پر عمل پیرا ہونے کی کوششوں پر تعلیمی شعبے کی تعریف کی۔دریں اثنا شہرقائد کراچی میں چند روز کے دوران کورونا وائرس کے کیسز میں اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے جس کے بعد صوبائی حکومت کی طرف سے کچھ علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاؤن کیا گیا ہے، جبکہ کچھ نئی ہدایات بھی جاری کی گئی ہیں کہ ایس او پیز پر عمل کیا جائے۔کورونا وائرس ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے پر اب تک 9 شادی ہالز اور 165 ریسٹورنٹ سیل، ایک درجن سے زائد پرائیویٹ اور6 سرکاری سکولز بند کیے جا چکے ہیں،تاہم بعدازاں ان سکولوں کو وارننگ کے بعد دوبارہ کھولنے کی اجازات دیدی گئی۔ضلع جنوبی کے نجی بینک میں 5 کیسز آنے پر بینک سیل کیا گیا، خلاف وزری پر 174 مختلف گاڑیوں کے چالان اورجرمانے کیے جا چکے ہیں۔دوسری طرف صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع بٹگرام میں گورنمنٹ ہائیر سیکنڈری سکول تھا کوٹ کے 9 اساتذہ میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی، متاثرہ اساتذہ اپنے گھروں میں کورنٹائن کر دیئے گئے، جبکہ سکول کو 15 دنوں کیلئے بند کر دیا گیا ہے۔

کورونا صورتحال

مزید :

صفحہ اول -