لیگی قیادت کیخلاف بغاوت کا مقدمہ سمجھ سے بالا،حکمران کشیدگی بڑھا رہے ہیں 

  لیگی قیادت کیخلاف بغاوت کا مقدمہ سمجھ سے بالا،حکمران کشیدگی بڑھا رہے ہیں 

  

اے این پی کے مرکزی رہنما میاں افتخار حسین نے کہا ہے ابھی تک تو اپوزیشن کے کسی بھی لیڈر کی طرف سے آئین و قانون کے بر خلاف کوئی بات نہیں کی گئی پھر (ن) لیگ کی پوری قیادت کیخلاف لاہور میں بغاوت کا مقدمہ کیوں بنایا گیا۔کیاان مقدمات سے حکومت اپوزیشن کو کوئی خاص پیغام دینا چاہتی ہے ابھی تو ہم نے حکومت مخالف کوئی جلسہ جلوس اور ریلی بھی نہیں نکالی،مگر حکمرانوں کے ہاتھ پاؤں پھول گئے ہیں اور جب ہم نے ملک گیر تحریک شروع کردی تو پھر ان کا کیا بنے گا۔وہ ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کررہے تھے۔ان کا کہنا تھا موجودہ حکمران یاد رکھیں جب ماضی میں وہ ملک بھر میں دھرنوں کی پر تشدد سیاست کررہے تھے تواسوقت ان پر بھی بغاوت کے مقدمے بنے تھے مگر ہم نے تو ابھی تک کوئی بھی ایسا جلاؤ گھیراؤ یا کسی سرکاری املاک کو نقصان نہیں پہنچایا، حکمرانوں کے طرز عمل سے کشیدگی بڑھ رہی ہے۔

میاں افتخار

مزید :

صفحہ اول -