"کیا ایک دوسرے کو غدار کہنے سے مسائل حل ہو سکیں گے؟سراج الحق نے نیا راگ چھیڑ دیا 

"کیا ایک دوسرے کو غدار کہنے سے مسائل حل ہو سکیں گے؟سراج الحق نے نیا راگ چھیڑ ...

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ حکمران دوسروں کو غدار کہنے کی بجائے ملک سے اپنی محبت اور وفاداری کا ثبوت دیں،موجودہ اور سابقہ حکمرانوں کے ایک دوسرے کو غدار کہنے سے مسائل حل نہیں ہوں گے۔

اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ سیاسی مخالفین پر غداری کے مقدمات کی مذمت کرتے ہیں۔غداری کو اتنا سستا نہ بنائیں۔ ماضی میں غداری کے الزامات کا نتیجہ سب نے دیکھ لیاہے۔ حکومت نے اپنی روش نہ بدلی تو اس کا بڑا خطرناک نتیجہ نکلے گا۔ وزراء کے زہر آلود بیانات عوام کے زخموں پر نمک پاشی کر رہے ہیں۔حکومت دو سال میں کوئی عوامی مسئلہ حل نہیں کر سکی۔ عوام کے دکھوں اور پریشانیوں میں اضافہ کرنے والی حکومت صرف باتیں کرنےاور بیانات دینےمیں ماہر ہے،میڈیا پر پابندیاں اور عدلیہ کو قابو کرنے کی خواہش سابقہ حکمرانوں کی طرح موجودہ حکمرانوں کو لے ڈوبے گی۔انہوں نے کہاکہ پاکستان پر حکمرانی کا حق صرف عوام کا ہے۔ پاکستان عوام نے عظیم جدوجہد اور قربانیوں سے حاصل کیا تھا مگر آج ملک میں عوام کی سننے والا کوئی نہیں۔ عوام مہنگائی، بے روزگاری اور غربت کی چکی میں پس رہے ہیں، مہنگائی نے عام آدمی کی زندگی اجیرن بنادی ہے۔ حکومت عوام کی پریشانیوں کا حل ڈھونڈنے کی بجائے مخالفین کو نیچا دکھانے اور غداری کے سر  ٹیفکیٹ بانٹنے میں لگی ہوئی ہے۔ وزیر اور مشیر ہر روز ایسے بیانات دے رہے ہیں جن سے ملکی مسائل اور عوام کے دکھوں میں مزید اضافہ ہورہاہے۔ وزراء کے زہریلے بیانات اور گفتگو سے پورا نظام خطرے میں ہے۔

سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ جمہوری آزادیوں پر قدغن لگانے سے نقصان ہمیشہ ملک کا ہوتاہے۔ حکمران آمرانہ سوچ اور فرعونیت چھوڑ کر جمہوری طرز عمل اختیار کریں اور قومی وحدت میں دراڑیں ڈالنے کی بجائے اتحاد و یکجہتی کے رویے کو فروغ دینے کی کوشش کریں۔

مزید :

قومی -