پی اینڈ جی نے 2040 تک گرین ہاؤس گیسوں کے اخراج کوزیرو پر لانے کیلئے اقدامات تیز کردیے

     پی اینڈ جی نے 2040 تک گرین ہاؤس گیسوں کے اخراج کوزیرو پر لانے کیلئے ...

  

کراچی (پ ر)پراکٹر اینڈ گیمبل (پی اینڈ جی) نے حال ہی میں اپنے  تمام عالمی پلانٹس میں ماحول کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے موسمیاتی تبدیلی کے حوالے سے اقدامات تیز کرنے کے ایک جامع پلان کا اعلان کیا ہے۔ پی اینڈ جی نے 2040تک خام مال سے لے کر ریٹیلر تک  اپنے تمام آپریشنز اور سپلائی چین میں  گرین ہاؤس گیسوں کے  اخراج کو صفر پرلانے  کاہدف مقرر کیا ہے۔پاکستان میں پی اینڈ جی پلانٹس ملازمین کے ساتھ ساتھ سپلائرز اور شراکت داروں کے درمیان پائیدار طریقہ کارکے فروغ کے ذریعے کمپنی کے طویل المدتی ماحولیاتی پائیداری کے وژن کے مطابق کام کررہے ہیں۔2020سے پی اینڈ جی نے پاکستان میں توانائی، پانی اور کاربن ڈائی آکسائیڈ میں بالترتیب 38فیصد، 59 فیصد اور 25فیصد کمی کی ہے۔

مزید برآں پی اینڈ جی پاکستان نے ’ایرئیل فارسٹ ان پاکستان کے بینر تلے 14,000 پودے لگانے کا بھی عہد کیا جو پی اینڈ جی کے  #ForestsForGood پروگرام کا حصہ ہے۔ عادل فرحت، سی ای او، پی اینڈ جی پاکستان نے کہا”موسمیاتی تبدیلی ایک حقیقت ہے اور ہم پی اینڈ جی کے اختراعی اقدامات اور روسائل کو بروئے کار لاکر موسمیاتی تبدیلی کے حوالے سے طویل المدت اور پائیدار نتائج کے حصول پر توجہ مرکوزکئے ہوئے ہیں۔ ہمیں یقین ہے کہہ ہمیں ماحولیاتی اثرات کو کم کرنے کیلئے اپنی ویلیو چین میں تمام سٹیک ہولڈرز کے ساتھ شراکتداری کے ذریعے  اہم اور مضبوط کردار ادا کرنا ہے۔یہ مسئلہ ایک کمپنی یا ملک سے کئی زیادہ گنا بڑا ہے اور ہمیں اس سے نبردآزما ہونے کیلئے مل کر کام کرنا ہوگا۔ پی اینڈ جی   ماحول کے تحفظ کی خاطر موسمیاتی تبدیلی کے اثرات سے نمٹنے کیلئے اقدامات کو تیز کرنے کیلئے پر عزم ہے اور اقدامات اٹھانے کا یہی وقت ہے۔کمپنی نے 2010سے 2020تک موثر توانائی اور قابل تجدید بجلی کے ذریعے عالمی سطح پر اپنے آپرشنز میں کاربن ڈائی آکسائیڈ اور دیگر زہریلی گیسوں کے اخراج میں 52 فیصد کمی کی ہے۔پی اینڈ جی گیسوں کے اخراج میں کمی کے ساتھ ساتھ قدرتی موسمیاتی سلوشنز کی طرف بھی بڑھ رہی ہے تاکہ  اپنے آپریشنز سے رہ جانے والے کسی بھی اخراج کو متواز ن کیا جاسکے جو 2030تک ختم نہیں کیا جاسکتا۔ ان میں نئے منصوبے بھی شامل ہیں جو جنگلات اور دیگر ایکو سسٹم کے تحفظ اور بحالی میں مدد گار ثابت ہوں گے جو لوگوں اور جنگلی حیات کیلئے لازمی جزو ہے۔ پی اینڈ جی 100 فیصد قابل تجدید بجلی کی خریداری کے 2030 کے اپنے ہدف کے حصول کے قریب ہے جس کیلئے وہ عالمی سطح پر قابل تجدید بجلی کے استعمال میں 97 فیصد تک اضافہ کرے گی۔ 2021 میں یونائیٹڈ سٹیٹس انوائرمنٹل پروٹیکشن ایجنسی نے پی اینڈ جی کو 100 ٹاپ  گرین پاور صارفین کی لسٹ میں 5 ویں نمبر جبکہ سائیٹ پر قابل تجدید پاور جنریشن کیلئے ٹاپ30 کی فہرست میں دوسرے نمبر پر رکھا جو ہمیں کنزیومر پراڈکٹ انڈسٹری میں اول درجہ کی کمپنی بناتا ہے۔ خام مواد سے لے کر ریٹیلرتک پی اینڈ جی کے سپلائی چین اور لاجسٹکس سے گیسوں کا اخراج کمپنی کے اپنے آپریشنز  س کا دس گنا   ہے   اور ٹیم نے 2030تک 40 فیصد کمی لانے کا ہدف مقرر کیا ہے۔ کمپنی مصنوعات کی نقل وحمل  کی کارکردگی میں 2030 تک 50 فیصد اضافہ کا منصوبہ بنا رہی ہے۔ پی اینڈ جی مجموعی اثرات مرتب کرنے کیلئے اپنے اقدامات کو تیز کررہی ہے، ان اقدمات میں    مصنوعات کے استعمال سے گرین ہاؤس گیسوں کے اخراج کو کم کرنے کیلئے صارفین کے ساتھ شراکت داری، کاربن  سے مبرا گھروں کی تعمیر کیلئے اتحاد کی تشکیل    اور کاربن سے پاک انفراسٹرکچر کیلئے پالیسی سلوشنز کا فروغ شامل ہے ۔ کمپنی نے عالمی سطح پر اقوام متحدہ کے  (Race to Zero) اور (Business Ambition for 1.5C)کے عزم کی توثیق کی ہے اور اپنا نیا کلائمیٹ ٹرانزیشن ایکشن پلان بھی شیئر کیا ہے جو موسمیاتی تبدیلی سے نمٹنے کیلئے اقدامات کو تیز کرنے کی جامع حکمت عملی وضع کرتا ہے۔

مزید :

کامرس -