اے ڈی آر ممبران کی تقرری  خوش آئندہے،مہمند مشران 

  اے ڈی آر ممبران کی تقرری  خوش آئندہے،مہمند مشران 

  

ضلع مہمند(نمائندہ پاکستان)اے ڈی آر تقرری شفاف اور اہل ممبران پر مشتمل ہیں۔اے ڈی آر کی شکل میں قبائلی جرگہ سسٹم کی بحالی خوش آئند اقدام ہے۔مذکورہ اقدام پر حکومت کے شکرگزار ہیں۔اے ڈی آر ممبران کو مزید وسعت دی جائے۔قومی عمائدین، مہمند کے مختلف اقوام کے نامی گرامی مشران ملک نادر منان،ملک صاحب داد، ملک نصرت، ملک اعجاز،ملک منظور،ملک غلام نبی،ملک احمد، ملک معشوق، ملک نثار،ملک نذیر، ملک رئیس، ملک اجمل، ملک شاہی گل،میاں گل غفار ودیگر نے مہمند پریس کلب میں اے ڈی آر کے حق میں ایک ہنگامی اور پر ہجوم پریس کانفرنس کے موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا۔کہ اے ڈی آر میں ممبران کی تقرری اہلیت کے بنیاد پر کیا گیا ہے۔جس میں ہر طبقہ فکر اور اقوام کے لوگ شامل ہیں۔انہوں نے بتایا کہ ہم روز اول سے اب تک انضمام کی مکمل مخالف ہیں۔کیونکہ انضمام سے قبائلی اضلاع تنازعات کی آماجگاہ بن گئی ہے۔جن کا قومی جرگہ کے بغیر کوئی حل طلب نہ تھا۔مگر حکومت نے موقع کو جانچتے ہوئے قبائلی اضلاع میں قومی جرگہ اے ڈی آر کے نام سے ایکٹ منظور کرلی۔جوکہ اس خوش آئندہ اقدام کو ہم سراہتے ہیں۔اور مذکورہ اقدام پر حکومت کا شکر گزار ہیں۔اور اے ڈی آر میں ممبران تقرری مکمل چھان بین اور اہلیت پر ہوئے ہیں۔جس پر تنقید کا کوئی جواز نہیں بنتا۔انہوں نے بتایا کہ اے ڈی آر کے ذریعے قبائلی اضلاع کے مسائل اور تنازعات دوسرے نظام کے بجائے خوش اسلوبی سے حل ہو سکتے ہیں۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ قبائلی عوام نے بیش بہا قربانیاں دی ہیں۔اور اپنے رسم رواج پر فدائیں ہیں۔جس کی بنیاد پر اے ڈی آر ممبران میں مزید اضافہ کریں تاکہ محروم رہ جانے والے قومی مشران کی حوصلہ افزائی سمیت ان کے خدمات اور قربانیوں کا ازالہ ہو سکے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -