ایوان فیلڈ ریفرنس کالعدم قرار دیا جائے، مریم نواز کی اسلام آباد ہائیکورٹ میں متفرق درخواست، رجسٹرار نے اعتراض لگا دیا

    ایوان فیلڈ ریفرنس کالعدم قرار دیا جائے، مریم نواز کی اسلام آباد ...

  

         اسلام آ باد (مانیٹرنگ ڈیسک، آئی این پی)  مسلم لیگ (ن) کی نائب صدرمریم نواز نے ایون فیلڈ ریفرنس کو کالعدم قرار دینے کیلئے متفرق درخواست دائر کردی ہے۔ مریم نواز نے سابق جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے انکشافات پر مبنی درخواست دائر کی ہے، مریم نواز نے شوکت عزیز صدیقی کے انکشافات کی روشنی میں بریت کی استدعا کی۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ شوکت عزیر صدیقی کی تقریر نے ساری کارروائی مشکوک بنا دی، ٹرائل کی ساری کارروئی، ریفرنس فائل کرنے کے احکامات بھی دبا وکا نتیجہ ہو سکتے ہیں۔جبکہ نیب کے لئے لازم ہوتا ہے کہ وہ شفاف طور پر کارروائی کرے۔ مریم نواز نے عرفان قادر ایڈووکیٹ کے ذریعے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست جمع کرائی ہے۔ درخواست میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ پاکستان کی تاریخ میں پولیٹیکل انجینئرنگ اور قانون کی سنگین خلاف ورزیوں کی کلاسک مثال ہے۔ ایون فیلڈ ریفرنس میں شریف خاندان پر الزام ہے کہ انہوں نے غیر قانونی ذرائع کی مدد سیحاصل کی گئی رقم سے لندن کے مہنگے ترین علاقے مے فیئر اور پارک لین کے نزدیک واقع چار رہائشی اپارٹمنٹس خریدے۔ ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت نے نواز شریف، ان کی بیٹی مریم اور ان کے داماد کیپٹین ریٹائرڈ صفدر کو جیل، قید اور جرمانہ کی سزا سنائی تھی۔ سزا کے خلاف ملزمان نے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کیا جس نے ستمبر 2018 میں ان سزاں کو معطل کر دیا تھا جس کے بعد نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن صفدر جیل سے رہا ہو گئے تھے۔اسلام آباد ہائیکورٹ کے رجسٹرار نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کی مرکزی نائب صدر مریم نواز  کی ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ کالعدم کرنے کی متفرق درخواست پراعتراض لگادیے۔اسلام آباد ہائیکورٹ کے رجسٹرار آفس نے مریم نوازکی درخواست پر 2 اعتراض لگائے۔رجسٹرار آفس  کے مطابق مریم نواز نے اس درخواست میں وہی استدعا کی جو مرکزی اپیل میں کی جبکہ مریم نواز اپیل میں فریش گراؤنڈز کورٹ کی اجازت سے ہی لے سکتی ہیں۔مریم نواز کی متفرق درخواست پر اعتراضات سے متعلق ان کے وکلا کو آگاہ کردیا گیا ہے۔مریم نوازکی متفرق درخواست آج اسپیشل بینچ کے سامنے اعتراضات کے ساتھ مقرر ہوگی اور دو رکنی خصوصی بینچ سماعت کرے گا۔خصوصی بینچ میں جسٹس عامرفاروق اور جسٹس محسن اخترکیانی شامل ہیں۔خیال رہے کہ مریم نواز نے عرفان قادر ایڈووکیٹ کے ذریعے اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست جمع کرائی تھی۔ 

مریم درخواست

مزید :

صفحہ اول -