کشمیر میں بھی کٹھ پتلی حکومت، آنے والا وقت پیپلز پارٹی کا ہے، اگلا وزیراعظم بھی جیالا ہوگا: بلاول بھٹو

کشمیر میں بھی کٹھ پتلی حکومت، آنے والا وقت پیپلز پارٹی کا ہے، اگلا وزیراعظم ...

  

       کوٹلی(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر کے عوام نے دھاندلی کا مقابلہ کیا، وفاق اور پنجاب کی طرح کشمیر میں بھی کٹھ پتلی حکومت ہے۔ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر کے کارکنوں کو سلام پیش کرتا ہوں، کشمیر کا بھٹو زندہ ہے، کشمیر کی بی بی زندہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر میں جیالے عمران خان کی کٹھ پتلیوں کا مقابلہ کر رہے ہیں، کٹھ پتلی حکومت سازشوں میں لگی ہوئی ہے، پیپلزپارٹی کا کشمیر سے سیاسی نہیں، نسلوں کا رشتہ ہے، ہم نے آمروں کا مقابلہ کیا، کٹھ پتلی کیا چیز ہے۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ آنے والا وقت جیالوں کا ہے، اگلا وزیراعظم بھی جیالا ہوگا، تمام صوبوں کیلئے پیغام ہے کہ بھٹو کے نعرے گونجیں گے،کہاں گئیں ایک کروڑ نوکریاں، 50 لاکھ گھر، عوام عمران خان سے حساب لیں گے،ہم ظالموں، آمروں کا مقابلہ کرتے ہیں، تم کٹھ پتلی تو کوئی چیز ہی نہیں،اگر صاف اور شفاف انتخابات کل کرائے جائیں تو آزاد کشمیر، چاروں صوبوں اور وفاق میں پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت ہوگی۔عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ہم خان صاحب سے پوچھتے ہیں کہ آپ کے دعوے کا کیا ہوا کہ گرین پاسپورٹ کی عزت کروائیں گے، باہر سے لوگ یہاں نوکری کے لیے آئیں گے، کہاں گئیں ایک کروڑ نوکریاں، 50 لاکھ گھر، عوام آپ سے حساب لیں گے۔انہوں نے کہا کہ جس طرح یہاں کے عوام نے وفاقی وزرا کی فوج، مسلم لیگ (ن) کی مقامی حکومت کا مقابلہ کر کے پاکستان پیپلز پارٹی کو قائد حزب اختلاف کا عہدہ سونپا اس پر میں کشمیری عوام کا شکر گزار ہوں۔انہوں نے کہاکہ آپ نے پورے ملک کو دکھا دیا ہے کہ کشمیر کا بھٹو، کشمیر کی بی بی زندہ ہے، ان پہاڑوں میں اگر کوئی سیاسی جماعت ہے، کوئی سیاسی کارکن ہے تو وہ پاکستان پیپلز پارٹی سے تعلق رکھتا ہے۔چیئرمین پی پی نے اپنے ورکرز کو ضمنی انتخاب میں پیپلز پارٹی کو ووٹ دینے کی ترغیب دلاتے ہوئے کہا کہ یہ کٹھ پتلی حکومت سازشوں میں لگی ہوئی ہے، انہیں معلوم ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کا کشمیر سے صرف سیاسی رشتہ نہیں، ہمارا نسلوں کا رشتہ ہے۔انہوں نے کہاہک حکومت نے سوچا کہ اگر چوہدری یٰسین کے بیٹے پر جعلی مقدمہ قائم کر کے جیل بھیج دیا جائے تو یہ ہمت ہار جائیں گے؟ یہ ضمنی انتخاب میں مقابلہ نہیں کرسکیں گے اور بھاگ جائیں گے لیکن یہ ان کی بھول ثابت ہوئی۔بلاول بھٹو نے کہا کہ حکومت کو معلوم ہی نہیں کہ ہر جیالے کے لیے جیل جانا ضروری ہے، وہاں جیالوں کی تربیت ہوتی ہے جہاں ہم ظالموں، آمروں کا مقابلہ کرتے ہیں، تم کٹھ پتلی تو کوئی چیز ہی نہیں۔عوام کو مخاطب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ میں آپ کے پاس نہ صرف ضمنی انتخاب میں بلکہ آنے والی نسلوں کا ساتھ مانگنے کیلئے آیا ہوں۔انہوں نے کہا کہ کشمیر کے عوام نے انتخابات میں پورے پاکستان کو ایک پیغام بھیجا ہے کہ اگر صاف اور شفاف انتخابات کل کرائے جائیں تو آزاد کشمیر، چاروں صوبوں اور وفاق میں پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت ہوگی۔انہوں نے کہا کہ آپ کے انتخابات کے بعد میں نے سندھ سے جنوبی پنجاب تک بائی روڈ سفر کیا، پاکستان پیپلز پارٹی کے جیالے اس ملک کے غریب عوام، بی بی کے تیر، بھٹو کے منشور، اس ملک کے مزدوروں، کسانوں اور طلبا کے لیے ایک آخری جنگ لڑنے کے لیے تیار ہیں۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ بھٹو نے ہمیں 4 اصول دیے کہ اسلام ہمارا دین، جمہوریت ہماری سیاست ہے، مساوات ہماری معیشت اور طاقت کا سرچشمہ عوام ہیں، یہ آج بھی ہمارا منشور کا حصہ ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر عوام کو بے روزگاری، غربت سے نکالنا ہے اور مہنگائی کا مقابلہ کرنا ہے تو ایک ہی جماعت کے پاس ان سارے مسائل کا حل ہے، پی پی پی نے ماضی میں بھی مہنگائی اور بے روزگاری کا مقابلہ کیا۔

بلاول بھٹو

مزید :

صفحہ اول -