بلین ٹری پراجیکٹ مالم جبہ سکینڈل،نیب کو رپورٹ عدالت میں جمع کرانے کاحکم

بلین ٹری پراجیکٹ مالم جبہ سکینڈل،نیب کو رپورٹ عدالت میں جمع کرانے کاحکم

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاور ہائیکورٹ کے جسٹس روح الامین اور جسٹس سید عتیق شاہ پر مشتمل دو رکنی بنچ نے بلین سونامی ٹری بینک آف خیبر اور مالم جبہ سکینڈل سے متعلق رٹ درخواستوں پر نیب کو دو ماہ کی مہلت دیتے ہوئے اس حوالے سے مفصل رپورٹ عدالت میں جمع کرنے کے احکامات جاری کر دیئے جسٹس روح الامین اور جسٹس سید عتیق شاہ پر مشتمل دو رکنی  بنچ نے عادل ظریف نامی درخواست گزار کی رٹ کی سماعت کی  دوران سماعت ان کے وکیل علی گوہر دروانی ایڈوکیٹ نے عدالت کو بتایا کہ نیب نے  مالم جبہ، بلین  ٹری سونامی اور بینک آف خیبر سے متعلق انکوائریاں شروع کی تھیں تاہم بااثر لوگوں کے اس کیس میں شامل ہونے کی وجہ سے ان کیسز پر کاروائیاں روک دی گئیں اور مختلف طریقوں سے یہ انکوائریاں طوالت کا شکار ہو رہی ہیں اس کے ساتھ ساتھ ایک عدالتی حکم کے ذریعے مالم جبہ انکوائری بھی صوبائی حکومت کو ارسال کی گئی اور یہ تاثر دیا گیا کہ یہ عدالتی حکم پر ہوا ہے جو کہ غیرقانونی ہے لہذا اس حوالے سے ضروری احکامات جاری کئے جائیں دوران سماعت ایڈیشنل پراسیکیوٹر جنرل نیب عظیم داد اور سینئر پراسیکیوٹر نیب محمد علی نے عدالت کو بتایا کہ ڈی آئی خان کے ایک سیکشن میں بلین ٹری سے متعلق انکوائری مکمل ہے اور اس حوالے سے ریفرنس دائرکیا جا رہا ہے اس کے ساتھ ساتھ دو تین ریجنز میں ابھی رپورٹ آنا باقی ہے اورا نکوائری جاری ہے جس کیلئے انہیں مہلت دی جائے دوران سماعت انہوں نے عدالت کو یہ بھی بتایا کہ کے بینک آف خیبر سے متعلق انکوائری مکمل کر کے ہیڈ کواٹر بھجوادی گئی ہے جس پر وہاں ریفرنس دائر کرنے سے متعلق فیصلہ کیا جائے گا جس پر عدالت نے انہیں 8 دسمبر تک مہلت دیتے ہوئے مزید سماعت ملتوی کردی اور انہیں ہدایت کی کہ وہ ان دو ماہ میں اپنی انکوائریاں مکمل کرکے عدالت کو رپورٹ کرے اس کیساتھ ساتھ عدالت نے مالم جبہ سکینڈل سے متعلق کیس کی انکوائری کیلئے بھی دو ماہ کی مہلت دے دی پراسکیوٹر نیب محمد علی نے عدالت کو بتایا کہ اس حوالے بہت سے امور کا جائزہ لیا جا رہا ہے اور رپورٹ مکمل ہوتے ہی عدالت میں پیش کی جائے گی عدالت نے کیس کی سماعت 8 دسمبر تک کیلئے ملتوی کردی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -