کرونا سے 2ہلاکتیں، جنوبی پنجاب میں 1کروڑ سے زائد افراد کی ویکسی نیشن 

کرونا سے 2ہلاکتیں، جنوبی پنجاب میں 1کروڑ سے زائد افراد کی ویکسی نیشن 

  

        ملتان،ڈیرہ غازیخان(وقائع نگار،سٹی رپورٹر) نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا کوئی  مریض جاں بحق نہیں ہوا.جس کے بعد اموات کی مجموعی  تعداد 926 تک برقرار رہی ہے۔تفصیل کے مطابق نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا کوئی مریض جاں بحق نہیں ہوا،یوں یکم اپریل 2020  سے 5 اکتوبر   2021 کے درمیان(بقیہ نمبر47صفحہ7پر)

 کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 926   ہے،جبکہ نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 18 ہو گئی ہے جن میں سے 12 مریضوں کا تعلق ملتان سے ہے,جبکہ کورونا کے شبہ میں 39 مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار  ہے،ادھر رواں سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 8ہزار 45 افراد رپورٹ ہوئے جن میں سے 2 ہزار 918 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے،ادھر کورونا مریضوں کے لئے  مختص   90 وینٹی لیٹرز میں سے صرف 18 وینٹی لیٹر خالی ہیں،   جبکہ کورونا آئی سو لیشن بلاک میں بستروں کی تعداد 368   ہے، جن میں سے  209 خالی ہیں،ادھر ترجمان نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان کے مطابق داخل 159 مریضوں میں سے 149 نے موذی وائرس کے خلاف ویکسین نہیں کروا رکھی ہے جبکہ زیر علاج کورونا میں مبتلا 18 مریضوں میں سے 18 مریضوں نے بھی کورونا ویکسین نہیں لگوا رکھی ہے جبکہ حکومت پنجاب کی ہدایت پر ضلعی انتظامیہ کی جانب سے ٹرانسپورٹ سیکٹر میں کرونا ایس او پیز کا سختی سے نفاذ کردیا گیا ہے اس سلسلے میں گزشتہ روز سیکرٹری آر ٹی اے رانا محسن نے میٹرو بس سروس،ویڈا اور انٹر سٹی ٹرانسپورٹ میں کرونا سرٹیفکیٹ کی چیکنگ شروع کردی ہے۔سیکرٹری آر ٹی اے رانا محسن نے میٹرو اور انٹر سٹی ٹرانسپورٹ سے 37 مسافروں کی ویکسی نیشن نہ ہونے پر آف روڈ کرکے کرونا ویکسین سنٹر بجھوادیا۔سیکرٹری آر ٹی اے رانا محسن نے کہا کہ ڈپٹی کمشنر نے 100 فی صد مسافروں کی ویکسین یقینی بنانے کا ٹاسک دیا ہے تاکہ وائرس کو پھیلنے سے روکا جاسکے۔حکومت پنجاب اور این سی او سی نے 30 ستمبر سے تمام ٹرانسپورٹ سروسز پر کرونا ویکسین سرٹیفکیٹ لازمی قرار دیا ہے ان احکامات کے تحت کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر ٹرانسپورٹرز کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔  ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان کے کرونا وارڈ میں داخل دو اور مریض جاں بحق ہوگئے، ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان کے فوکل پرسن ڈاکٹر خالد تحسین نے بتایا کہ ٹیچنگ ہسپتال میں کرونا کے400ٹیسٹ کیے گئے جس میں سے 15 کیسز مثبت اور 385 نیگیٹو رپورٹ ہو ئے،جبکہ9افراد نے اپنے آپ کو ہو م آئسولیٹ کر لیا 5مریضوں کی حالت انتہائی خطرناک ہے ٹیچنگ ہسپتال کے کرونا وارڈ میں داخل دو مریض غلام مصطفی اور اللہ رکھا جاں بحق ہو گئے،جبکہ ہسپتال میں داخل6مریضوں میں کرونا کا خدشہ پایا جارہا ہے اور فوکل پرسن ڈاکٹر خالد تحسین نے کہا کہ کرونا ایک خطرناک وباء ہے حکومتی ایس او پیز پرعمل کرکے اس سے محفوظ رہاجاسکتا ہے شہری حکومتی ایس اوپیز پر عملدرآمد یقینی بنائیں خود بھی محفوظ رہیں اور دوسروں کوبھی محفوظ رکھیں۔این سی او سی کی سفارشات کی روشنی میں پنجاب حکومت کی خصوصی ہدایات پر جنوبی پنجاب میں لوگوں کو کورونا سے بچا کی ویکسین لگانے کا عمل پوری طرح جاری ہے۔ اب تک جنوبی پنجاب کے گیا رہ اضلاع میں ایک کروڑ 36لاکھ 64ہزار 869 لوگوں کو ویکسین لگائی جا چکی ہے۔ ترجمان محکمہ صحت جنوبی پنجاب کے مطابق اب تک جنوبی پنجاب میں 13لاکھ 17ہزار 591لوگوں کے ٹیسٹ لیے گئے ہیں جن میں سے 59479 مثبت جبکہ 1236315منفی آئے۔ جنوبی پنجاب میں کورونا ویکسین مراکز کی تعداد 22ہے جن میں 13مراکز 24/7کام کررہے ہیں۔ سیکریٹری صحت جنوبی پنجاب محمد اجمل بھٹی نے جنوبی پنجاب کے تمام چیف ایگزیکٹیو افسران کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا ویکسین لگانے کا عمل مزید تیز کیا جائے اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری کردہ ہدایات کی روشنی میں تمام لوگوں کو ویکسین لگانے کے لیے ٹیمیں بھیجی جائیں۔ معذور اور بزرگ افراد کی ویکسینیشن ان کے گھروں میں جاکر کی جائے۔ مزید یہ کہ انہوں نے تمام لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ کورونا ایس اوپیز پر پوری طرح عملدرآمد کریں۔ ماسک لازمی پہنیں اور سماجی فاصلہ ہرصور ت یقینی بنایا جائے تاکہ کورونا سے نجا ت حاصل کرکے پھر سے زندگی کے معمولات بحال کیے جاسکیں۔

کرونا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -