جعلی ووچرزبنا کرلوٹ مار، ڈپٹی اکاؤنٹنس  پٹواری کامزید جسمانی ریمانڈ منظور

   جعلی ووچرزبنا کرلوٹ مار، ڈپٹی اکاؤنٹنس  پٹواری کامزید جسمانی ریمانڈ ...

  

  ملتان (  خصو صی رپورٹر  )جوڈیشل مجسٹریٹ ملتان نے جعلی وو(بقیہ نمبر44صفحہ7پر)

چرز بنا کر قومی خزانے کو 25 کروڑ روپے سے زائد کا نقصان پہنچانے کے مقدمہ میں گرفتار محکمہ اکانٹس کے ڈپٹی اکاونٹنٹس محمد جہانزیب اور امتیاز علوی جبکہ پٹواری مظہر حیات کا مزید تین روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے اینٹی کرپشن حکام کے حوالے کرنے کا حکم دیا ہے۔ ڈپٹی اکانٹنٹس کے خلاف مقدمہ نمبر 11 اور 22 درج ہے جبکہ ملزم پٹواری کا نام مقدمہ نمبر 22 میں شامل ہے۔ اسی مقدمہ میں ملوث متعدد ملزمان نے اینٹی کرپشن عدالت سے عبوری ضمانتیں حاصل کررکھی ہیں جن پر 9 اکتوبر کو سماعت ہوگی۔ اینٹی کرپشن نے ھائی وے اور اکانٹ آفس کے تقریبا 32 ملازمین کے خلاف مقدمہ نمبر 9 درج کیا تھا اینٹی کرپشن عدالت نے ڈپٹی اکانٹنٹس امتیاز علوی اور جہانزیب کو جسمانی ریمانڈ کے بعد جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوایا اور ضمانت بعد از گرفتاری بھی خارج کی تھی تاہم اب مقدمہ نمبر 11 اور 22 میں شامل تفتیش کرنے کے لیے سرکل آفیسر نے دوبارہ جسمانی ریمانڈ کی درخواست کی جو منظور کرلی گئی ملزمان کے وکیل کی استدعا پر ملزمان کا میڈیکل کرانے کی استدعا بھی منظور کی گئی تھی۔ قبل ازیں فاضل عدالت میں پولیس تھانہ اینٹی کرپشن کے مطابق ملزمان کے خلاف مقدمات درج کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ محکمہ ہائی وے میں اکانٹس آفس کے عملہ کی ملی بھگت سے 25 کروڑ روپے سے زائد کی کرپشن کی گئی۔ اس معاملہ پر 32  ملازمین کے خلاف مقدمہ درج ہوا۔یہ ایک میگا کرپشن سکینڈل ہے۔ ملزمان نے جعلی ووچرز بنا کر قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچایا ہے۔ کرپشن میں استعمال ھونے والے جعلی ووچرز برآمد ہوچکے ہیں اکانٹس آفس نے ریکارڈ کی نقول بھی اینٹی کرپشن کو فراہم کی تھیں۔ جبکہ دیگر ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی جانی ہے۔ گرفتار دو ملزمان سے آٹھ کروڑ روپے سے زائد کی برآمدگی بھی کی جاچکی ہے اب دوسرے مقدمہ میں طلبی کی گئی ہے تاکہ ملزمان سے باقی 17 کروڑ کی ریکوری ہوسکے۔ ملزمان کو 8 اکتوبر کو دوبارہ عدالت پیش کیا جائے گا۔

پٹواری

مزید :

ملتان صفحہ آخر -