ماچھیوال، رورل ہیلتھ سنٹر میں کرونا ویکسی نیشن کی جعلی انٹریوں کا انکشاف

  ماچھیوال، رورل ہیلتھ سنٹر میں کرونا ویکسی نیشن کی جعلی انٹریوں کا انکشاف

  

وہاڑی(بیورورپورٹ،نمائندہ خصوصی) رورل ہیلتھ سنٹر ماچھیوال میں عملہ کی جانب سے مبینہ طور پر کرونا ویکسین کی جعلی انٹریاں ڈالنے کا انکشاف ہوا ہے نواحی گاؤں 561 ای بی کے رہائشی خالد محمود ولد محمد شریف ناصر(بقیہ نمبر34صفحہ6پر)

  نے سیٹیزن پورٹل پر کمپلینٹ کرتے ہوئے لکھا کہ وہ کرونا ویکسینیشن لگوانے کے لیے رورل ہیلتھ سنٹر ماچھیوال گیا اور عملہ کو کرونا ویکسین لگانے کا کہا تو عملہ نے کرونا ویکسینیشن کی پہلی ڈوز پہلے ہی لگنے کا انکشاف کر دیا جبکہ میں نے ابھی تک کرونا ویکسینیشن کی کوئی ڈوز نہیں لگوائی جس پر میں نے محکمہ ہیلتھ کے ضلعی افسران کو صورتحال سے آگاہ کیا جنہوں نے معاملے کی تحقیقات کرنے کا کہا لیکن تاحال کچھ نہ ہو سکا انہوں نے کہا کہ ہمیں پڑتال کرنے پر پتہ چلا ہے کہ محکمہ ہیلتھ کا زبیر نامی ملازم اور ایک مقامی ہیلتھ ورکر جعلی انٹریاں ڈالنے میں ملوث ہیں اور میرے علاوہ اور لوگوں کی بھی بوگس انٹریاں ڈالی گئی ہیں. سیٹیزن پورٹل سے کمپلینٹ ڈپٹی کمشنر وہاڑی کو موصول ہو چکی ہے جو کمپلینٹ آگے سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر انجم اقبال کو فارورڈ کی گئی لیکن کافی روز گزرنے کے بعد بھی تاحال کوئی کارروائی عمل میں نہ آ سکی ہے اس بابت سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر انجم اقبال نے کہا کہ معاملہ کی انکوائری کی گئی ہے گزشتہ ماہ کرونا ویکسین ٹیم 561 ای بی میں ویکسین لگانے گئی تو شکایت کنندہ کی بیوی جو کہ ہیلتھ ورکر ہے اس نے گھریلو ناچاقی کی وجہ سے اپنے شوہر کے شناختی کارڈ کا غلط استعمال کرتے ہوئے بوگس انٹری ڈالی جس کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جا رہی ہے۔

کرونا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -