محکمہ ریلوے نے مہنگائی کے ستائے عوام پر کرائے میں اضافے کا مزید بوجھ ڈال دیا

محکمہ ریلوے نے مہنگائی کے ستائے عوام پر کرائے میں اضافے کا مزید بوجھ ڈال دیا
محکمہ ریلوے نے مہنگائی کے ستائے عوام پر کرائے میں اضافے کا مزید بوجھ ڈال دیا

  

 لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )محکمہ ریلوے نے مسافروں کو زور دار جھٹکا دیتے ہوئے ٹرینوں کے کرائے میں ہوشربااضافہ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے ۔

نجی ٹی وی" ایکسپریس نیوز" کے مطابق مہنگائی کے ستائے عوام پر ریلوے حکام نے ٹرین کے کرائے میں اضافے کا مزید بوجھ ڈال دیا، کرایوں میں اضافہ کلو میٹر کے حساب سے کیا گیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ لاہور سے راولپنڈی کے درمیان اے سی پارلر کار کلاس کا پرانہ کرایہ 1350سے بڑھا کر نیا کرایہ 1800روپے کردیا گیا ہے، اے سی بزنس کلاس کا پرانہ کرایہ1150ے بڑھا کر نیا کرایہ 1600روپے کردیا گیا ہے جب کہ اے سی سٹینڈر کا پرانہ کرایہ1 ہزار روپے سے بڑھا کر1350روپے کردیا گیا ہے, اسی طرح اکانومی کلاس کے کرائے میں 200 روپے اضافہ کیا گیا ہے جس کے بعد اکانومی کلاس کا ٹکٹ 650کے بجائے 850 روپے میں فروخت کیا جائے گا۔

 جاری رپورٹ کے مطابق لوئیر اے سی کلاس کا لالہ موسیٰ اور گجرات سٹیشن تک کا نیا کرایہ 700روپے، لوئیر اے سی کلاس کا وزیر آباد اور گوجرانوالہ اسٹیشن تک کا نیا کرایہ 550 روپے کردیا گیا ہے۔اسی طرح لاہور سے جہلم ریلوے اسٹیشن تک اکانومی کلاس کا نیا کرایہ 600 روپے، لاہور سے لالہ موسیٰ اور گجرات ریلوے سٹیشن تک اکانومی کلاس کا نیا کرایہ 450 روپے، لاہور سے وزیرآباد ریلوے اسٹیشن تک کا نیا کرایہ 250روپے کیا گیا ہے جب کہ لاہور سے گوجرانوالہ سٹیشن تک اکانومی کلاس کا نیا کرایہ200 روپے کردیا گیا ہے۔

مزید :

قومی -